1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

باپ اولاد کی کیا تربیت کرے؟

Discussion in 'Quran e Kareem' started by PRINCE SHAAN, Jan 17, 2013.


  1. [​IMG]
    فرمانِ باری ہے:


    وَلَقَدْ آتَيْنَا لُقْمَانَ الْحِكْمَةَ أَنِ اشْكُرْ* لِلَّـهِ ۚ وَمَن يَشْكُرْ* فَإِنَّمَا يَشْكُرُ* لِنَفْسِهِ ۖ وَمَن كَفَرَ* فَإِنَّ اللَّـهَ غَنِيٌّ حَمِيدٌ (١٢) وَإِذْ قَالَ لُقْمَانُ لِابْنِهِ وَهُوَ يَعِظُهُ يَا بُنَيَّ لَا تُشْرِ*كْ بِاللَّـهِ ۖ إِنَّ الشِّرْ*كَ لَظُلْمٌ عَظِيمٌ (١٣) وَوَصَّيْنَا الْإِنسَانَ بِوَالِدَيْهِ حَمَلَتْهُ أُمُّهُ وَهْنًا عَلَىٰ وَهْنٍ وَفِصَالُهُ فِي عَامَيْنِ أَنِ اشْكُرْ* لِي وَلِوَالِدَيْكَ إِلَيَّ الْمَصِيرُ* (١٤) وَإِن جَاهَدَاكَ عَلَىٰ أَن تُشْرِ*كَ بِي مَا لَيْسَ لَكَ بِهِ عِلْمٌ فَلَا تُطِعْهُمَا ۖ وَصَاحِبْهُمَا فِي الدُّنْيَا مَعْرُ*وفًا ۖ وَاتَّبِعْ سَبِيلَ مَنْ أَنَابَ إِلَيَّ ۚ ثُمَّ إِلَيَّ مَرْ*جِعُكُمْ فَأُنَبِّئُكُم بِمَا كُنتُمْ تَعْمَلُونَ (١٥) يَا بُنَيَّ إِنَّهَا إِن تَكُ مِثْقَالَ حَبَّةٍ مِّنْ خَرْ*دَلٍ فَتَكُن فِي صَخْرَ*ةٍ أَوْ فِي السَّمَاوَاتِ أَوْ فِي الْأَرْ*ضِ يَأْتِ بِهَا اللَّـهُ ۚ إِنَّ اللَّـهَ لَطِيفٌ خَبِيرٌ* (١٦) يَا بُنَيَّ أَقِمِ الصَّلَاةَ وَأْمُرْ* بِالْمَعْرُ*وفِ وَانْهَ عَنِ الْمُنكَرِ* وَاصْبِرْ* عَلَىٰ مَا أَصَابَكَ ۖ إِنَّ ذَٰلِكَ مِنْ عَزْمِ الْأُمُورِ* (١٧) وَلَا تُصَعِّرْ* خَدَّكَ لِلنَّاسِ وَلَا تَمْشِ فِي الْأَرْ*ضِ مَرَ*حًا ۖ إِنَّ اللَّـهَ لَا يُحِبُّ كُلَّ مُخْتَالٍ فَخُورٍ* (١٨) وَاقْصِدْ فِي مَشْيِكَ وَاغْضُضْ مِن صَوْتِكَ ۚ إِنَّ أَنكَرَ* الْأَصْوَاتِ لَصَوْتُ الْحَمِيرِ* ﴾ ۔۔۔ سورة لقمان

    کہ ’’ہم نے لقمان کو حکمت عطا کی تھی کہ اللہ کا شکر گزار ہو جو کوئی شکر کرے اُس کا شکر اُس کے اپنے ہی لیے مفید ہے اور جو کوئی کفر کرے تو حقیقت میں اللہ بے نیاز اور آپ سے آپ محمود ہے (12) یاد کرو جب لقمان اپنے بیٹے کو نصیحت کر رہا تھا تو اس نے کہا "بیٹا! خدا کے ساتھ کسی کو شریک نہ کرنا، حق یہ ہے کہ شرک بہت بڑا ظلم ہے" (13) اور حقیقت یہ ہے کہ ہم نے انسان کو اپنے والدین کا حق پہچاننے کی خود تاکید کی ہے اُس کی ماں نے ضعف پر ضعف اُٹھا کر اسے اپنے پیٹ میں رکھا اور دو سال اُس کا دودھ چھوٹنے میں لگے (اِسی لیے ہم نے اُس کو نصیحت کی کہ) میرا شکر کر اور اپنے والدین کا شکر بجا لا، میری ہی طرف تجھے پلٹنا ہے (14) لیکن اگر وہ تجھ پر دباؤ ڈالیں کہ میرے ساتھ تو کسی ایسے کو شریک کرے جسے تو نہیں جانتا تو ان کی بات ہرگز نہ مان دُنیا میں ان کے ساتھ نیک برتاؤ کرتا رہ مگر پیروی اُس شخص کے راستے کی کر جس نے میری طرف رجوع کیا ہے پھر تم سب کو پلٹنا میری ہی طرف ہے، اُس وقت میں تمہیں بتا دوں گا کہ تم کیسے عمل کرتے رہے ہو (15) (اور لقمان نے کہا تھا کہ) "بیٹا! کوئی چیز رائی کے دانہ برابر بھی ہو اور کسی چٹان میں یا آسمانوں یا زمین میں کہیں چھپی ہوئی ہو، اللہ اُسے نکال لائے گا وہ باریک بیں اور باخبر ہے (16) بیٹا، نماز قائم کرنے کا حکم دے، بدی سے منع کر، اور جو مصیبت بھی پڑے اس پر صبر کر یہ وہ باتیں ہیں جن کی بڑی تاکید کی گئی ہے (17) اور لوگوں سے منہ پھیر کر بات نہ کر، نہ زمین میں اکڑ کر چل، اللہ کسی خود پسند اور فخر جتانے والے شخص کو پسند نہیں کرتا (18) اپنی چال میں اعتدال اختیار کر، اور اپنی آواز ذرا پست رکھ، سب آوازوں سے زیادہ بُری آواز گدھوں کی آواز ہوتی ہے۔‘‘



    نماز قائم کرو۔
    امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کا اہتمام کرو۔
    مشکلات پر صبر سے کام کرو۔
    گال پھلا کر (نخوت سے) بات نہ کرو۔
    زمین میں اکڑ کر نہ چلو۔
    چال ڈھال میں میانہ روی اختیار کرو۔
    آواز پست رکھو۔
     
  2. INNOCENT BOY

    INNOCENT BOY Senior Member

  3. Dr Trojan

    Dr Trojan Regular Member

    Bht Achi Sharing Hai....
     
  4. Danger Avenger

    Danger Avenger Cruise Member

  5. *MS*

    *MS* Superior Member

    جزاک اللہ خیر
     
  6. ~Asad~

    ~Asad~ Moderator

    عمدہ بہت پیاری شرنگ
     

Share This Page