1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Ankho Mein Koi Khawab Utarne Nahi Deta

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by Mohammad Sajjad, Jun 27, 2014.

  1. Ankho Mein Koi Khawab Utarne Nahi Deta​
    Ye Dil K Muje Chain Se Marne Nahi Deta​

    Bicharay to ajeeb payar jatata hai khato mein​
    Mil jaye tu phir had se guzarne nahi deta​

    Wo shakas khiza rut mein bhi muhtat rahay kitna​
    Sokhay hoye pholo ko bikharne nahi deta​

    Ik roz teri payas khariday ga wo ghabro​
    Pani tuje panghat se jo bharne nahi deta​

    Wo dil mein tabasam ki kiran gholne wala​
    Rothay to roto ko bhi sanwarne nahi deta​

    Mein us ko manao k gham e dehar se uljhon​
    Mohsin wo koi kaam bhi kerne nahi deta​
     
  2. PakArt

    PakArt May Allah bless all Martyre of Pakistan

    اشتراک کرنے کا شکریہ
    :mp:
     
  3. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    Very Nice
    Keep it up
     
  4. thankxxxxxxxxxxxxxxxxxxxxxxxx for liking...........
     
  5. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    very Nice....
     

Share This Page