1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Azmat-e-zindagi Ko Bech Diya

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by mawais551, Jul 9, 2014.

  1. mawais551

    mawais551 Lover

    ghazal
    Azmat-e-zindagi ko bech diya
    Hum ne apni Khushi ko bech diya

    Chashm-e-saaqi kay ik ishaaray pe
    Umr ki tishnagi ko bech diya

    Rind jaam-o-suboo pe hanstay hain
    ShaiKh ne bandagii ko bech diya

    Rah-guzaaron pe lut gai radha
    Shaam ne baansuri ko bech diya

    Jagmagaatay hain wehashaton kay dayaar
    Aqal ne aadmi ko bech diya

    Lab-o-rukhsaar kay iwaz hum ne
    Sitwat-e-Khusrawi ko bech diya

    Ishq behroopiya hai aye ‘Saghar’!
    Aap ne saadgi ko bech diya
     
  2. نمرہ

    نمرہ Management

    nice sharing
     
  3. Net KiNG

    Net KiNG VIP Member

    بہت خوبصورت شئیرنگ کی ہے
     
  4. AsadUllah

    AsadUllah Cruise Member

    [FONT="Al_Qalam Tehreeri"]Wah_ wah _wh
    bohut Achy
    [/FONT]
     
  5. Very nice sharing...keep it up
     
  6. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    بہت عمدہ اپ کا بہت بہت شکریہ
     

Share This Page