1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Ghar Maum Ka Pehleh To Banaaya Nahin Jata

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by UmerAmer, Jul 13, 2014.

  1. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    Ghar Maum Ka Pehleh To Banaaya Nahin Jata
    Bann Jaaye To Suraj Sey Bachaaya Nahin Jata

    Marzi Hai Samundar Ki Dubbo De Ya Bachaa Ley
    Takkat Pe Koi Hukamm Chalaaya Nahin Jata

    Mein Apney Gareeban Mein Agar Dekhoon To Mujh Sey
    Ilzaam Kissi Par Bhi Lagaaya Nahin Jata

    Mill Jaaye Agar Peissa To Uthaa Letey Hein Pull Bhi
    Insaane Gira Hum Sey Uthaaya Nahin Jata

    Sachayi Ko Yeh Jhoot Bhala Keissey Mitaaye
    Phoonkon Sey To Khursheed Bhujaaya Nahin Jata

    Abb Baat Nahin Aahoon Ki Cheekhon Ki Hai ae Dost
    Abb Mujh Sey Mera Dard Chupaaya Nahin Jata​
     
  2. AsadUllah

    AsadUllah Cruise Member

    [FONT="Al_Qalam Tehreeri"]Niceèeeee....[/FONT]
     
  3. نمرہ

    نمرہ Management

    nice sharing
     
  4. Net KiNG

    Net KiNG VIP Member

    بہت خوبصورت شیئرنگ کی ہے آپ نے​
     
  5. PakArt

    PakArt May Allah bless all Martyre of Pakistan

  6. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    بہت عمدہ اپ کا بہت بہت شکریہ
     

Share This Page