1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Is bar bi kisi say december nahin ruka...!!!

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by UmerAmer, Jul 20, 2014.

  1. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    Is bar bi kisi say december nahin ruka...!!!

    Lambay safar ki oat mein pal bar nahin ruka
    Mein waqt k fareb mein aa kar nahin ruka

    Phir aa gaya aik naya sal dosto
    Is bar bhi kisi say december nahin ruka

    Lay kar koi shakhs haath mein kashkol-e-waqt
    Aisa safar kiya k kahin per nahin ruka

    Manzar kay aks mein koi chehra chatakh gaya
    Sheshay kay paas aa kay jo pathar nahin ruka

    Chalta raha adoo ki safin rondta howa
    Lakhon ka khoon-e-jigar kar k b lashkar nahin ruka

    Bas yeh howa k Akhri lamha bhi aa gaya
    Dil ka tawaf koocha-e-dilbar nahin ruka ....!!!!
     
  2. نمرہ

    نمرہ Management

    nice sharing
     
  3. BOHAT KHOOB
    BOHAT HI UMDAH SHERING

    [​IMG]
     
  4. PakArt

    PakArt May Allah bless all Martyre of Pakistan

  5. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    بہت عمدہ اپ کا بہت بہت شکریہ
     

Share This Page