1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

کیا شرمندگی کا اظہار کافی ہو گا؟


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'Sports' started by PRINCE SHAAN, Mar 20, 2013.

Sports"/>Mar 20, 2013"/>

Share This Page

  1. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest

    کیا شرمندگی کا اظہار کافی ہو گا؟

    [​IMG]

    پاکستان جنوبی افریقہ سے ایک نہیں دو نہیں تینوں ٹیسٹ ہار گیا اور بری طرح ہار گیا۔کلین سوئپ ہو گیا۔ ٹیم کی نیک نامی پر چونا پھر گیا۔پاکستانی ٹیم کہیں سے بھی مد مقابل کی ٹکرکی ٹیم نظر نہیں آئی۔ پہلے ٹیسٹ کی غلطیاں دوسرے اور تیسرے ٹیسٹ میں تسلسل کے ساتھ دہرائی گئیں۔ انتہائی غیر سنجیدہ ،غیر پیشہ ورانہ اور غیر ذمہ دارانہ کرکٹ کا مظاہرہ کیاگیا۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق نے کہا کہ سنچورین ٹیسٹ میں ناکامی کا سبب بیٹنگ لائن اپ کافیل ہونا ہے، اس میچ اور سیریز میں ناکامی پر شرمندہ ہیں، اور پوری کوشش کرینگے کہ اس کا ازالہ کیاجائے۔ ان سمیت بیٹسمین مطلوبہ نتائج دینے میں ناکام رہے جس کے باعث ٹیم کو پے درپہ شکستوں کا سامنا کرنا پڑا ہے۔۔۔ بات دراصل یہ ہے کہ سلیکشن سے لے کر کپتانی تک سب جگہ کوئی نہ کوئی کسر موجود رہی۔ سعید اجمل کو دوسرے اینڈ سے ساتھ دینے والا کوئی نہ تھا۔عبدالرحمن اور ڈومیسٹک کرکٹ میں جھنڈے گاڑنے والے وہاب ریاض کو کیوں نظر انداز کیا گیا؟ سلیکشن کمیٹی اس کی جواب دہ ہے۔ باؤلنگ میں عمر گل اور حفیظ کو صحیح طریقے سے استعمال نہیں کیا گیا۔ دو ٹیسٹ میں اظہر علی ناکام رہے تو تجربہ کار فیصل اقبال کو تیسرے ٹیسٹ میں کیوں نہیں کھلایا گیا؟ کپتان اور کوچ ذمہ دار ہیں۔تینوں ٹیسٹ میں پاکستان کی طرف سے نہ تو کسی ہوم ورک کا نام و نشان ملا اور نہ ہی کسی گیم پلان کی موجودگی نظر آئی۔ پوری سیریز ٹیم حالات کے دھارے پر بہتی نظر آئی۔حد تو یہ ہے کہ کوئی ٹیسٹ مانچویں دن تک پہنچ ہی نہیں سکا۔ اس سے پہلے ہی پاکستانی ٹیم ڈھیر ہو گئی۔ نئے پاکستانی باؤلرز نے اپنی بساط برابر بہت عمدہ کارکردگی دکھائی ۔ مصباح کی بات درست ہے کہ بیٹسمین بری طرح ناکام رہے لیکن کیا صرف اعتراف اورشرمندگی کا اظہار کافی ہو گا؟ کیا اب یہ مناسب نہ ہوگا کہ کچھ سینئر کھلاڑی اپنے مستقبل کا فیصلہ کر لیں؟ اب تو سب کو پتہ چل گیا کہ پاکستان کرکٹ اس وقت کہاں کھڑی ہے۔ پاکستان اور جنوبی افریقہ کی کرکٹ سیریز کو اگر ان دونوں ممالک کے ڈومیسٹک اسٹرکچر کے درمیان مقابلہ قرار دیا جائے تو غلط نہ ہوگا۔ میزبان ٹیم کے ڈیبیو کرنے والے کھلاڑیوں کی میچ وننگ پرفارمنس اور ہمارے قدرے نئے لیکن کچھ تجربہ کار کھلاڑیوں کی پرفارمنس میں زمین آسمان کا فرق تھا۔۔۔ اب کم از کم اس شکست سے یہ سبق تو پی سی بی کو سیکھ لینا چاہئے کہ کب تک ڈومیسٹک کرکٹ کی حالت زار سے نظریں چراتے رہیں گے۔جب تک ڈومیسٹک کرکٹ پر پیسہ خرچ نہیں کریں گے۔۔۔ با صلاحیت کھلاڑیوں کو مواقع نہیں دیں گے۔۔۔ میرٹ کے کلچر کو نہیں اپنائیں گے ۔۔۔ ہر تھوڑے عرصے بعد کسی اچھی ٹیم سے ایسے ہی شرمناک شکست کے بعد اپنے زخم چاٹتے رہیں گے۔۔!!

     
  2. INNOCENT BOY
    Offline

    INNOCENT BOY Newbi
    • 16/16

Share This Page