1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

قرآن پاک کی تلاوت۔۔۔اسکی ذمہ داریاں

Discussion in 'Quran e Kareem' started by mehwish, Jul 23, 2014.

  1. mehwish

    mehwish Well Wishir


    [​IMG]

    جب بھی قرآن پڑھا جا رہا ہو ،آپ کو اس دوران خاموش رہنا چاہئے۔گویا وہ سماعت وبصارت اور مختصریہ کہ اپنے پورے وجود کے ساتھ قرآن آیات سے بہرہ مند ھو رہے ہیں اور ان کی تلاوت سے فائدہ اٹھائیے۔

    قرآن دیکھ کر اس کی تلاوت
    اصول کافی کی کتاب”فضل القرآن“ میں مصحف کے ذریعہ قرآن کی تلاوت کا ایک باب ھے اس میں معصومین علیھم السلام سے روایتیں نقل ھوئی ھیں اور اس مطلب کو بیان کرتی ھیں کہ بہتر ھے انسان قرآن کوخودکتاب کھول کر پڑھے۔

    اسحاق بن عمار کہتے ھیں کہ میں نے امام صادق علیہ السلام سے دریافت کیا:

    ”جعلت فداک انی احفظ القرآن علی ظہر قلبی فاقراٴہ علی ظھر قلبیٰ فضل او انظرفی المصحف“؟

    آپ پر فدا ھو جاؤںمیں قرآن کا حافظ ھوں! پس اگرمیں قرآن کی تلاوت اپنے حفظ سے کروں یہ بہتر اور با فضیلت ھے با قرآن کھولوں اور اسے دیکھ کر تلاوت کروں؟

    حضرت نے جواب میں فرمایا:

    ”بل اقراٴہ وانظر فی المصحف فھو افضل، اماعلمت ان النظر فی المصحف عبا دة[38]

    بلکہ قرآن کو دیکھ کر اس کی تلاوت کرو، قرآن کھولو اور پڑھویہ افضل ھے۔ کیا تم نھیں جانتے کہ قرآن میں دیکھنا عبات ھے؟۔

    نہ صرف قرآن پڑھنا اورقرآن پہ نگاہ ڈالنا عبادت ھے بلکہ قرآن کو اپنے ھمراہ رکھنابھی عبادت ھے یہ معجز نما الفاظ ھیں جن کا جواب کوئی نھیں لاسکتا اور یہ خداوندعالم کا کلام ھے ان الفاظ کا اپنے ھمراہ رکھنا عبادت وثواب ھے۔

    قرآن ھمراہ رکھنا
    کتاب ”وافی“ کے باب ” اتخاذ المصحف وکتابتہ“ میں حمادبن عیسیٰ امام صادق علیہ السلام سے نقل کرتے ھیں کہ آپ نے فرمایا:

    ” انّہ لیعجبنی ان یکون فی البیت مصحف یطرد اللّہ بہ الشّیاطین“۔

    ” مجھے یہ بات پسند ھے کہ گھر میں قرآن ھو، خداوندعالم اس کے ذریعہ شیطانوں کو دور کرتا ھے“۔

    البتہ یہ بات واضح ھے کہ اپنے ھمراہ قرآن رکھنا اوراس کے حفاظت کرنا اسی صورت میں شیطانوں کو دور کرے گا جب اس کی تلاوت کی جائے اس سے تعلیم حاصل کی جائے اس سے تزکیہ و تعلیم کی بات پیش کی جائے اور اس کے مسائل و احکام کی تحقیق کی جائے اور ان پر عمل کیا جائے۔ اس سے کوئی فائدہ نہ ھوگا کہ قرآن گھر میں رکھ دیا جائے اور اس پر گردوخاک پڑتی رہے مذکورہ پہلی صورت میں تو قرآن شفاعت کرےگا اور دوسری صورت میں خدا سے شکایت کرے گا پس قرآن کی تلاوت کرنا اور قرآن کے ظاہر سے انس رکھنا ھی برکت ھے چہ جائیکہ اس سے بڑھ کر تعلیم حاصل کرنا اور آیات کی تحقیق کرنا۔

    گھر میں قرآن پڑھنا
    ”البیوت التی یقراٴ فیھا القرآن“(یعنی وہ گھر جن میں قرآن کی تلاوت کی جاتی ھے) کے باب میں شیخ کلینیۺ نے پیغمبر اسلام سے ایک روایت نقل کی ھے، آنحضرت نے فرمایا:

    ”نور وا بیوتکرم بتلاوة القرآن ولاتتخذوھا قبوراً“

    اپنے گھروں کوقرآن کی تلاوت کے ذریعہ روشن ومنور بناؤانھیں قبرستان نہ بناوٴ کیونکہ جس گھر میں قرآن کا ذکر نہ ھو وہ گویا خاندانی قبرستان ھے، زندگی بسر کرنے کی جگہ نھیں ھے،کیونکہ انسان اسی وقت زندہ ھے جب اس کی زندگی میں قرآن شامل ھو۔
     
  2. Alone Mazari

    Alone Mazari Regular Member

  3. JAZAK ALLAH KHAIR
    SADA KHUSH RAHAIN

    [​IMG]

     
  4. Jazakaallah
     
  5. Roohulaminbj

    Roohulaminbj Regular Member

    JazakALLAH very nice
     
  6. PakArt

    PakArt May Allah bless all Martyre of Pakistan

  7. نمرہ

    نمرہ Management

    jazak Allah very nice,,,,,
     
  8. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    عمدہ بہت پیاری شرنگ
     

Share This Page