1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Charagh her ghar ke liye

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by PRINCE SHAAN, Aug 10, 2014.

  1. [​IMG]

    CHARAGH HER GHAR KE LIYE

    Kahan to Taye tha charaghan har ek ghar ke liye
    Kahin charaagh mayassar nahi hai shahar ke liye

    Yahaan darakhton ke saaye main dhoop lagti hai
    Chalo Yahaan se chalain ab aur umr bhar ke liye

    Na ho qameez to ghutnon se pait dhaank lainge
    Yeh log...... kitnay munaasib hain is safar ke liye

    Kuch na sahi........ mager aadmi ka khawab sahi
    Koyi haseen nazaaraa to ho........... nazar ke liye

    Woh mutmayin hain ke pathar pighal nahi sakta
    Main be qaraar hoon aawaaz ke aik asar ke liye

     
  2. نمرہ

    نمرہ Management

    nice sharing
     
  3. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    Very Nice
    Keep it up
     
  4. زبردست شئیرنگ
    ہمارےساتھ شئیر کرنے کا شکریہ​
     
  5. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    بہت عمدہ اپ کا بہت بہت شکریہ
     

Share This Page