1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

سیاسی فتنہ


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'News & Views' started by نمرہ, Aug 14, 2014.

News & Views"/>Aug 14, 2014"/>

Share This Page

  1. نمرہ
    Offline

    نمرہ Regular Member
    • 38/49

    حدیث کی کتابوں میں کثرت سے ایسی روایتیں ہیں جن میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے امت کو یہ ہدایت دی کہ تم لوگ سیاسی بگاڑ کے مسئلے کو لے کر حکمرانوں سے ہر گز ٹکراو نہ کرنا-اس سلسلے میں حضرت ثوبان بن یجدد کی ایک روایت میں یہ الفاظ آئے ہیں : یعنی جب میری امت کے اندر تلوار داخل کی جائے گی تو اس کے بعد وه قیانت تک اس سے اٹهائی نہیں جائے گی-(رواه احمد و ابوداود،بحوالہ مشکات المصابیح،رقم الحدیث:5406)
    اس حدیث میں ساده طور پر صرف ایک اخلاقی تعلیم نہیں ہے،بلکہ اس میں نہایت گہری سیاسی حکمت چهپی هوئی ہے-اگر چہ اس حکمت کو پوری تاریخ میں کوئی شخص دریافت نہ کر سکا-اسی کا یہ نتیجہ ہے کہ امت کے اندر حضرت عثمان کے زمانے میں تلوار داخل هوئی تو اب تک وه امت سے رفع نہ هو سکی-
    جن مسلمانوں نے حضرت عثمان کو قتل کیا،انهوں نے کیوں ایسا کیا-اس کا سبب یہ تها کہ ان کو حضرت عثمان آئڈیل سیاست کے معیار پر کم دکهائی دئے-مگر یہ معاملہ حضرت عثمان پر نہیں رکا-اس کے بعد دوباره سیاسی معیار کو لے کر حضرت علی کو شہید کر دیا گیا،اسی معیار کی بنیاد پر لوگوں نے حضرت معاویہ سے جنگ کی،اسی معیار کی بنیاد پر حضرت حسین کا ٹکراو یزید کے ساته پیش آیا،وغیره-
    اصل یہ ہے کہ قانون فطرت کے مطابق،اس دنیا میں کوئی بهی سیاسی نظام آئڈیل نہیں هو سکتا- سیاسی نظام کے معاملے میں همارے لیے صرف ایک ہی ممکن انتخاب ہے،وه یہ کہ سیاسی نظام کو آئڈیل سے نہ ناپیں،بلکہ آئڈیل سے کم پر راضی هو جائیں-ایسا نہ کیا جائے تو ایک حکمران کو ہٹانے کے بعد جو دوسرا حکمران آئے گا، وه بهی لوگوں کو آئڈیل سے کم دکهائی دے گا،اس طرح نئے حکمران سے دوباره لڑائی شروع هو جائے گی اور پهر وه کبهی ختم نہ هو گی-مزکوره حدیث کا مطلب یہ ہے کہ تم لوگ اس معاملے میں پریکٹیکل وزڈم کا طریقہ اختیار کرو،اور موجوده حکمراں پر راضی رہتے هوئے غیر سیاسی دائرے میں تعمیر اور ترقی کا کام جاری رکهو-​
     
  2. PakArt
    Online

    PakArt ITUstad dmin Staff Member
    • 83/98

    Hidden Content:
    یہ لنک دیکھنے کے لیے فورم پر آپ کا اکاونٹ ہونا ضروری ہے اکاونٹ بنانے کے لیے یہاں کلک کریں
     
  3. UmerAmer
    Offline

    UmerAmer Regular Member
    • 38/49

    Very Nice
    Keep it up
     
  4. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest

    Khandani siyasat ka koi rewaj na deen main hai na duniya main, khandani siyasi nizam ka matlab badshahi nizam jisko islam main malookiyat kahte hain jis k khelaaf Hazrat Hussain (R.A) ne aik azeem qurbani di.
     

Share This Page