1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

یہ آپ کے ہاتھ میں کیا ھے؟


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'Urdu Iqtebaas' started by نمرہ, Aug 18, 2014.

Urdu Iqtebaas"/>Aug 18, 2014"/>

Share This Page

  1. نمرہ
    Offline

    نمرہ Regular Member
    • 38/49

    یہ آپ کے ہاتھ میں کیا ھے؟
    “یہ کاپی ھے۔” میں نے جواب دیا۔
    “یہ کیسی کاپی ہے؟” قدرت نے پوچھا۔
    “اس میں دعائیں لکھی ھیں۔ میرے کئی دوستوں نے کہا تھا کہ خانہ کعبہ میں ھمارے لئے دعا مانگنا۔ میں نے وہ سب دعائیں اس کاپی میں لکھ لی تھیں۔”
    “دھیان کرنا” وہ بولے۔ “یہاں جو دعا مانگی جائے وہ قبول ھو جاتی ھے”
    “کیا مطلب؟” میری ھنسی نکل گئی۔ “کیا دعا قبول ھوجانے کا خطرہ ھے؟”
    “ھاں، کہیں ایسا نہ ھو کہ دعا قبول ھو جائے۔”
    میں نے حیرت سے قدرت کی طرف دیکھا۔
    بولے “اسلام آباد میں ایک ڈایریکٹر ھیں۔ عرصہ دراز ھوا انہیں روز بخار ھو جاتا تھا۔ ڈاکٹر، حکیم، وید، ھومیو سب کا علاج کر دیکھا، کچھ افاقہ نہ ھوا۔ سوکھ کر کانٹا ھو گئے۔ آخر چارپائی پر ڈال کر کسی درگاہ پہ لے گئے۔ وھاں ایک مست سے کہا بابا دعا کر کہ انہیں بخار نہ چڑھے۔۔۔ انہیں آج تک بخار نہیں چڑھا۔
    اب چند سال سے ان کی گردن کے پٹّھے اکڑے ھوئے ھیں۔ وہ اپنی گردن ادھر ادھر ھلا نہیں سکتے۔ ڈاکٹر کہتے ہیں کہ یہ مرض صرف اسی صورت میں دور ھو سکتا ھے کہ انہیں بخار چڑھے۔ انہیں دھڑادھڑ بخار چڑھنے کی دوائیاں کھلائی جا رھی ھیں مگر انہیں بخار نہیں چڑھتا۔”
    دعاؤں کی کاپی میرے ھاتھ سے چھوٹ کر گر پڑی۔ میں نے اللہ کے گھر کی طرف دیکھا۔ “میرے اللہ! کیا کسی نے تیرا بھید پایا ھے؟”
    ممتاز مفتی کی کتاب، لبّیک، سے اقتباس
     
  2. PakArt
    Offline

    PakArt ITUstad dmin Staff Member
    • 83/98

  3. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest

    بہت اچھی شیئرنگ کی ہے آپ نے. شکریہ
     

Share This Page