1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

بیان کیا جاتاھے

Discussion in 'Library' started by نمرہ, Aug 24, 2014.

  1. نمرہ

    نمرہ Management

    بیان کیا جاتاھے اپنے زمانے کا ایک فاضل استاد بادشاہ کے بیٹوں کو پڑھایا کرتا تھا اس کا قاعدہ تھا کہ شاھزادوں کی معمولی سی غلطی کو بھی نظر نہ کرتا ادھر ان سے کوئی کوتاھی ھوئی اور ادھر اس نے سزا دی شہزادے یہ تشدد کافی عرصہ برداشت کرتے رھے لیکن پھر ان کا پیمانہ صبر لبریز ھوگیا اور مناسب موقع دیکھ کر ایک دن انھوں نے اپنے باپ کو اس مصیبت سے آگاہ کر دیا بچوں کی زبانی استاد کی شکایت سن کر بادشاہ کو بہت ملال ھوا اس نے اسی وقت استاد کو بلوایا اور اس سے کہا آخر اس کی کیا وجہ ھے کہ تم دوسرے شاگردوں کے ساتھ ایسی سختی کا برتاو نہیں کرتے جیسی شہزادوں کے ساتھ روا رکھتے ھو؟
    فاضل استاد نے جو اب دیا حضور والا یوں تو ادب سکیھنا اور سکھانا سبھی کے لیے ضروری ھے لیکن شہزادوں کے لیے تو حد درجہ ضروری ھے کیونکہ آگے چل کر یہ ملک کا انتظام سنبھالیں گے غریب غربا کی بات تو یہ ھے کہ ان کی خامیوں کا اثر ان کی ذات تک ھی محدود رھتا ھے لیکن حکمرانوں کی غلطیوں کی سزا پورے ملک کو بھگتنی پڑتی ھے بس یہی سوچ کر میں شہزادوں کی تعلیم وتر بیت پر زیادہ توجہ دیتا ھوں .
    وضاحت
    حضرت سعدی اس حکایت میں بیان کرتے کہ جو بچہ جتنی اھم ذمے داری سنبھالنے کے لیے تیار کرنا ھو اس کی تعلیم و تر بیت پر اتنی ھی توجہ دینی چاھیے​
     
  2. PakArt

    PakArt May Allah bless all Martyre of Pakistan

Share This Page