1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

حضرت سلیمان علیہ السلام کے


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'History aur Waqiat' started by نمرہ, Aug 27, 2014.

History aur Waqiat"/>Aug 27, 2014"/>

Share This Page

  1. نمرہ
    Offline

    نمرہ Regular Member
    • 38/49

    حضرت سلیمان علیہ السلام کے دربار میں ایک شخص حاضر ہوا وہ بہت ڈرا ھوا تھا اور تھر تھر کانپ رھا تھا چہرہ اس کا مارے خوف کے سفید پڑ گیا تھا حضرت سلیمان نے پوچھا
    اے بندہ خدا تیری یہ حالت کیوں ھے؟ تجھے کیا پریشانی لاحق ھوگئی ھے اس نے جواب دیا
    اےپیغمبر خدا مجھے عزرائیل نظر آے تو میرے ھوش وحواس گم ھو گے اب بھی تصور میں عزرائیل کی قہر آلودہ نظریں دیکھتا ھوں تو سارا چین اڑ جاتا ھے
    اس نے حضرت سلیمان سے درخواست کی کہ وہ اسے وہاں سے ھزاروں میل دور ملک ھندوستان بھجوادیں اس طرح ھو سکتا ھے اس کا خوف دور ھو جاے حضرت سیلمان نے ھوا کو حکم دیا کہ اس شخص کو ہندوستان چھوڑ آو وہ ہندوستان پہنچا ھی تھا کہ عزرائیل کو منتظر پایا فرشتہ اجل نے اللہ کے حکم سے اس کی روح قبض کر لی
    دوسرے روز جب حضرت سلمان کی ملاقات حضرت عزرائیل سے ھوئی تو پیغمبر نے پوچھا
    آپ نے ایک شخص کو اس قدر قہرآلود نظروں سے کیوں دیکھا تھا کیا اس کی روح قبض کرنے کا ارادہ تھا پھر اسے غریب الوطن بھی کیا جہاں اس کا کوئی والی وارث ہی نہ تھا
    عزرائیل نے جواب دیا
    دراصل مجھے اس شخص کی روح ھندوستان کی سر زمین پر قبض کرنا تھی اور وہ مجھے یہاں نظر آیا تو مجھے حیرت ھوئی کہ وہ شخص ھندوستان سے ھزاروں میل دور یہاں کیا کر رھا ھے پھر اللہ کے حکم سے جب میں ھندوستان پہنچا تو یہ وھاں موجود تھا
    اور میں نے اس کی روح قبض کر لی.
    وضاحت:
    اس حکایت سے یہ بات ثابت ھوتی کہ موت کا ایک دن مقرر ھے اور وہ ھر حال میں آے گی جہاں پر اور جس جگہ موت کا وقت مقرر گیا ھے موت وہیں آے گی
    دعا ھے کہ خدا ھمارا خاتمہ ایمان پر کرے
    آمین​
     
  2. waqas mughal
    Online

    waqas mughal Guest

    Very nice sharing
     
  3. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest

  4. ~Asad~
    Offline

    ~Asad~ Regular Member
    • 36/49

    جزاک اللہ بہت اچھے
     

Share This Page