1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice

تنقید کا اصول

Discussion in 'Hadess Mubarak' started by نمرہ, Sep 24, 2014.

Share This Page

  1. نمرہ
    Offline

    نمرہ Management
    • 38/49



    تنقید کا اصول

    ایک صاحب نے کہا : " میں نے سنا ہے کہ آپ صحابہ کرام ، علماء عظام سب پر تنقید کرتے ہیں "- میں نے کہا کہ یہ بالکل لغو بات ہے - صحابہ اور علماء کے درمیان کاما نہیں ہے بلکہ فل سٹاپ ہے- علماء پر تنقید کا ہر شخص کو حق ہے ، مگر صحابہ پر تنقید کا کسی کو حق نہیں -

    اصحاب رسول کا معاملہ ایک خصوصی معاملہ ہے - ان کے متعلق حدیث میں آیا ہے کہ لا تتخذوهم من بعدی غرضا ( میرے بعد ان کو نشانہ نہ بناو ) اس لئے صحابہ مطلق طور پر تنقید سے مستثنی ہیں - ان کے سلسلہ میں صرف یہ ممکن ہے کہ کسی مسئلہ میں اگر دو صحابی کے درمیان ایسا اختلاف پایا جائے جس میں تطبیق نہ دی جا سکتی هو تو دونوں میں سے ایک کا انتخاب کیا جائے گا - یعنی ایسے مسئلہ میں ترجیح کا طریقہ اختیار کیا جائے گا نہ کہ تنقید کا طریقہ -

    مگر صحابہ کے بعد جہاں تک دوسرے علماء اور رہنماوں کا تعلق ہے تو ان کے باره میں امام ابو حنیفہ نے فرمایا کہ وه بهی آدمی اور هم بهی آدمی یہی صحیح اسلامی مسلک ہے اور یہی میرا مسلک ہے - میں صحابہ کرام کو تنقید سے مستثنی سمجهتا هوں - میں نے کبهی صحابہ کرام پر تنقید نہیں کی اور نہ بقید هوش و حواس ایسا کر سکتا هوں - مگر صحابہ کے بعد دوسری اسلامی شخصیتوں پر علمی تنقید کی جا سکتی ہے - اور ایسی تنقید ہر دور میں علماء امت کے درمیان جاری رہی ہے - غیر صحابہ پر تنقید کے معاملہ میں کبهی کسی نے نکیر نہیں کی -

    تاہم غیر صحابہ پر تنقید کے سلسلہ میں بهی ایک فرق کو ملحوظ رکهنا لازمی طور پر ضروری ہے - وه یہ کہ وه تنقید هو نہ کہ تعییب - یعنی علمی اختلاف رائے هو نہ کہ ذاتی الزام تراشی - مثال کے طور پر علامہ ابن تیمیہ کی زندگی کا ایک پہلو یہ ہے کہ انهوں نے نکاح نہیں کیا - دوسرا یہ کہ انهوں نے بہت سی کتابیں لکهیں - ان کے نکاح نہ کرنے کو میں ایک ذاتی مسئلہ قرار دوں گا اور اس کی بنیاد پر ان کے اوپر کوئی تنقید نہیں کروں گا - مگر ان کی کتابیں میرے نزدیک مقدس نہیں - ان میں اگر کوئی بات غیر صحیح نظر آئے تو اس پر علمی حدود میں تنقید کی جا سکتی ہے -
     
  2. UmerAmer
    Offline

    UmerAmer Moderator
    • 38/49

  3. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest

  4. Ali baba
    Offline

    Ali baba Well Wishir
    • 16/16

  5. Asad khan786
    Offline

    Asad khan786 Well Wishir
    • 16/16

    اپ نے بہت ہی اچھی شیرنگ کی ہے اپ کی مذید شیرنگ کا انتظار رے گا اپنی کشش جاری رکھے
     
  6. ғσяυм gυяυ
    Online

    ғσяυм gυяυ Guest

  7. ~Asad~
    Offline

    ~Asad~ Management
    • 36/49

    عمدہ شرنگ شکریہ
     

Share This Page