1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

بظاہر صحت بخش لیکن حقیقت میں انتہائی خطرن&#157


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'Health & Diet' started by نمرہ, Nov 1, 2014.

Health & Diet"/>Nov 1, 2014"/>

Share This Page

  1. نمرہ
    Offline

    نمرہ Regular Member
    • 38/49

    Hidden Content:
    یہ لنک دیکھنے کے لیے فورم پر آپ کا اکاونٹ ہونا ضروری ہے اکاونٹ بنانے کے لیے یہاں کلک کریں

    سیب کے جوس کے بارے میں ایک عام خیال پایا جاتا ہے کہ یہ غذائیت سے بھرپور انتہائی مفید چیز ہے لیکن اگر آپ کو علم ہو کہ جو چیز آپ پی رہے ہیں اور چینی سے بھرپور انتہائی مضر ہو سکتی ہے تو یقیناًآپ فوراً اسے پھینک دیں گے۔

    حالیہ سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایک گلاس سیب کے جوس میں سات جبکہ چکنائی سے پاک دہی میں پانچ چینی کے چمچوں کے برابر چینی پائی جاتی ہے جو کہ کسی بھی صحت مند انسان کے لئے انتہائی نقصان دہ ہے۔سروے کرنے والی کمپنی ’بوپا ‘کا کہنا ہے کہ انہوں نے جب مختلف ماؤں سے پوچھا گیا کہ کیا انہیں معلوم ہے کہ صحت کے نام پر جو وہ اپنے بچوں کو کھلا رہی ہیں ،کیا حقیقت میں وہ صحت بخش ہے تو 90 فیصد کا جواب نہیں میں تھا۔’بوپا‘ کا کہنا ہے کہ اسی طرح ایک ڈونٹ میں دو چمچ چینی پائی جاتی ہے۔ اگر بچوں کی روزانہ خوراک میں چینی کی زیادہ مقدار پائی جائے تو ان کو ذیابیطس ، موٹاپااور امراض قلب جیسی بیماریاں لاحق ہو سکتی ہیں۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ دن میں چھ چمچ یا اس سے کم چینی کھانے سے خطرناک امراض سے بچا جا سکتا ہے۔ پہلے خیال کیا جاتا تھا کہ سافٹ ڈرنکس صحت کے لئے نقصان دہ ہے لیکن اب یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ ایسے فروٹ جوس بھی ماٹاپے کا باعث بنتے ہیں۔اسی طرح کم چکنائی والی غذاؤں کے بارے میں یہ بات معلوم ہوئی ہے کہ یہ بھی چینی سے بھرے ہوتے ہیں لہذا ان سے بھی اجتناب ضروری ہے۔​
     
  2. UmerAmer
    Offline

    UmerAmer Regular Member
    • 38/49

    Bohat Khoob
     
  3. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest

    Bohat maloomati sharing ki hai aap ne. Shukriya
     

Share This Page