1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

ﺍﮮ ﺧﺎﻟﻖِ ﺟﮩﻨﻢ!ﻣﺠﮭﮯ ﺟﮩﻨﻢ ﺳﮯ ﺑﭽﺎ

Discussion in 'History aur Waqiat' started by PRINCE SHAAN, Nov 5, 2014.


  1. [​IMG]

    ﺍﮮ ﺧﺎﻟﻖِ ﺟﮩﻨﻢ!ﻣﺠﮭﮯ ﺟﮩﻨﻢ ﺳﮯ ﺑﭽﺎ

    ﺭﻭﺍﯾﺖ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺣﻀﻮﺭ ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠّﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭﺳﻠﻢ، ﮐﮯ ﺯﻣﺎﻧﮧﺀ ﻣﺒﺎﺭﮎ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ﺁﺩﻣﯽ ﺗﮭﺎ۔ﺟﺐ ﻟﻮﮒ ﺑﺴﺘﺮﻭﮞ ﭘﺮ ﺳﻮ
    ﺟﺎﺗﮯ ﺍﻭﺭ ﺁﻧﮑﮭﯿﮟ ﺳﮑﻮﻥ ﺣﺎﺻﻞ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺑﻨﺪ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﯿﮟ ﺗﻮ ﻭﮦ ﮐﮭﮍﺍ ﮨﻮ ﮐﺮ ﻧﻤﺎﺯ ﭘﮍﮬﺘﺎ،ﻗﺮﺁﻥ ﻣﺠﯿﺪ ﮐﯽ
    ﺗﻼﻭﺕ ﮐﺮﺗﺎ ﺍﻭﺭ ﮐﮩﺘﺎ ﺍﮮ ﺧﺎﻟﻖِ ﺟﮩﻨﻢ!ﻣﺠﮭﮯ ﺟﮩﻨﻢ ﺳﮯ ﺑﭽﺎ۔ﺣﻀﻮﺭ ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠّﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭﺳﻠّﻢ ﮐﯽ ﺑﺎﺭﮔﺎﮦ ﻣﯿﮟ ﺍﺱ
    ﺷﺨﺺ ﮐﺎ ﺫِﮐﺮ ﮐِﯿﺎ ﮔﯿﺎ ﺗﻮ ﺁﭖ ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠّﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭﺳﻠّﻢ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺟﺐ ﻭﮦ ﺍﯾﺴﯽ ﺣﺎﻟﺖ ﻣﯿﮟ ﮨﻮ ﺗﻮ ﻣﺠﮭﮯ ﺧﺒﺮ ﮐﺮ
    ﺩﯾﻨﺎ۔ﭼﻨﺎﻧﭽﮧ ﺁﭖ ﻭﮨﺎﮞ ﺗﺸﺮﯾﻒ ﻻﺋﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺗﻼﻭﺕ ﻭ ﺩﻋﺎﺋﯿﮟ ﺳﻨﯿﮟ۔ﺻﺒﺢ ﮨﻮﺋﯽ ﺗﻮ ﺁﭖ ﻧﮯ ﺍﺱ ﺳﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺍﮮ
    ﻓﻼﮞ!ﺗُﻮ ﻧﮯ ﺍﻟﻠّﮧ ﺳﮯ ﺟﻨّﺖ ﮐﺎ ﺳﻮﺍﻝ ﮐﯿﻮﮞ ﻧﮧ ﮐِﯿﺎ؟ ﻭﮦ ﺁﺩﻣﯽ ﺑﻮﻻ ﯾﺎ ﺭﺳﻮﻝ ﺍﻟﻠّﮧ ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠّﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭﺳﻠّﻢ،ﻣﯿﮟ
    ﺟﻨّﺖ ﮐﺎ ﺳﻮﺍﻝ ﮐﯿﺴﮯ ﮐﺮﻭﮞ ﺍﺑﮭﯽ ﺗﻮ ﻣﯿﺮﮮ ﺍﻋﻤﺎﻝ ﺍﺱ ﮐﯽ ﻃﻠﺐ ﮐﮯ ﻻﺋﻖ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺋﮯ۔ﺍِﺱ ﮔﻔﺘﮕﻮ ﮐﻮ ﺗﮭﻮﮌﯼ ﮨﯽ ﺩﯾﺮ
    ﮔﺰﺭﯼ ﺗﮭﯽ ﮐﮧ،ﺟﺒﺮﺍﺋﯿﻞ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﻧﺎﺯﻝ ﮨﻮﺋﮯ ﺍﻭﺭ ﻋﺮﺽ ﮐﯽ ﯾﺎ ﺭﺳﻮﻝ ﺍﻟﻠّﮧ ) ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠّﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭﺳﻠّﻢ ﻓﻼﮞ ﺁﺩﻣﯽ ﮐﻮ ﺑﺘﺎ
    ﺩﯾﺠﯿﮯ ﮐﮧ ﺍﻟﻠّﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽٰ ﻧﮯ ﺍﺳﮯ ﺟﮩﻨﻢ ﺳﮯ ﻣﺤﻔﻮﻅ ﻓﺮﻣﺎ ﻟﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺍﺳﮯ ﺟﻨّﺖ ﻣﯿﮟ ﺩﺍﺧﻞ ﮐﺮ ﺩﯾﺎ ﮨﮯ۔

    ﻣُﮑﺎﺷِﻔۃُ ﺍﻟﻘﻠُﻮﺏ = ﺻﻔﺤﮧ 619،620
    ﻣﺼﻨﻒ = ﺣﻀﺮﺕ ﺍﻣﺎﻡ ﻏﺰﺍﻟﯽ ﺭﺣﻤﺘﮧ ﺍﻟﻠّﮧ ﻋﻠﯿﮧ

     
  2. نمرہ

    نمرہ Supper Moderator

    subhan Allah
     
  3. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    JazakAllah
     
  4. ~Asad~

    ~Asad~ Moderator

    عمدہ شرنگ شکریہ
     

Share This Page