1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

بے مثل ہے کونین میں سرکار کا چہرہ

Discussion in 'Hamd-o-Naat' started by PRINCE SHAAN, Dec 3, 2014.



  1. Hello guest, Thank you for Register or you log to see the links!


    بے مثل ہے کونین میں سرکار کا چہرہ
    آئینہِ حق ہے شہہِ ابرار کا چہرہ

    دیکھیں تو دعا مانگیں یہی یوسفِ کنعاں
    تکتا رہوں خالق ! ترے شہکار کا چہرہ

    خورشیدِ حلیمہ! تری مشتاق ہیں آنکھیں
    بھاتا نہیں اب ماہِ ضیا بار کا چہرہ

    اے خُلد کروں گا ترا دیدار بھی لیکن
    اِس دم ہے نظر میں ترے مختار کاچہرہ

    والشمس کی یہ دادِ قسم کہتی ہے مڑ کر
    بے داغ رہا شاہ کے کردار کا چہرہ

    جلوؤں سے ہو معمور کیوں نہ دل کا مدینہ
    آنکھوں میں ہے اُس مطلعِ انوار کا چہرہ

    دورانِ شفاعت وہ سکوں بخش دِلا سے
    بے فکرِ ندامت ہے گنہگار کا چہرہ

    کِھلتا ہی گیا پھول کی صورت دمِ آخر
    اُترا نہیں دیکھا ترے بیمار کا چہرہ

    پوچھا جو یہ سائل نے کہ کیا چیز ہے اَحسن
    صدیق نے برجستہ کہا "یار کا چہرہ"

    جھپکے جو نصیرآنکھ دمِ نزع تو یا رب!
    پُتلی میں پھرے احمدِ مختار کا چہرہ
    نصیر الدین نصیر)​
     
  2. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    JazakAllah
     
  3. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    عمدہ بہت پیاری شرنگ اپ کا بہت بہت شکریہ
     
  4. PakArt

    PakArt May Allah bless all Martyre of Pakistan

  5. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Management

    ماشا اللہ ۔۔۔۔
    بہت اچھا لگا پڑھ کر
     

Share This Page