1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

انوکھی نئی جڑواں دنیاؤں کی دریاف

Discussion in 'General Knowledge' started by ~Asad~, Dec 11, 2014.

  1. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    سائنسدانوں نے نظام شمسی سے باہر ایسی جڑواں دنیائیں دریافت کی ہیں جو نہ سیارے ہیں اور نہ ہی ستارے۔ کچھ ماہرین کے نزدیک یہ پلینامو ہیں جو کسی ستارے سے منسلک نہیں ہوتے۔
    حالیہ سالوں میں ماہرین فلکیات نے ایسی اور بھی دنیاؤں کا پتہ لگایا ہے لیکن یہ پہلی جوڑی ہے جو کسی ستارے کے گرد گھومنے کی بجائے ایک دوسرے کے گرد چکر لگا رہی ہے۔
    سائنس نامی جریدے میں لکھتے ہوئے ماہرین فلکیات نے کہا ہے کہ ان جڑواں دنیاؤں کی دریافت سے سیاروں اور ستاروں کی تخلیق کے بارے میں موجودہ نظریات پر نظر ثانی کے لیئے دباؤ پیدا ہو سکتا ہے۔
    کینیڈا کی جامعۂ ٹورانٹو کے رے جے وردھنے نے بتایا کہ ان دونوں اجرام فلکی کا انفرادی حجم سورج کے ہجم کے تقریباً ایک فیصد کے برابر ہے۔
    نئے دریافت ہونے والے اجرام فلکی غالباً ستاروں کی طرح ہی تخلیق پاتے ہیں لیکن ان کا درجہ حرارات بہت کم ہے۔ ان میں سے بڑے کا وزن سیارے جوپیٹر سے چودہ گنا جبکہ چھوٹے کا سات گنا زیادہ ہے۔ خیال ہے کہ ان کی عمر دس لاکھ سال ہے۔ یہ دنوں دنیائیں ایک دوسرے سے سورج اور پلوٹو کی دوری کے مقابلے میں چھ گنا زیادہ دور ہیں
     
  2. Very nice sharing......................
     
  3. ahmadkhan12

    ahmadkhan12 Regular Member

    Bohat hi achi sharing
     

Share This Page