1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Khwab

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by cute fairy, Dec 30, 2014.

  1. cute fairy

    cute fairy ITU Friend

    Dekh lo Khwab magar Khwab ka charcha na karo.
    Log jal jayenge sooraj ki tamanna na karo.


    Waqt ka kya hai kisi pal bhi badal sakata hai.
    Ho sake tum se to tum mujh pe bharosa na karo.


    Kirchiyaan Toote hue aks ki chubh jayengi.
    Aur kuch roz abhi aaina dekha na karo.

    Ajanabi lagne lage Khud tumhen apana hi wajood.
    Apne din raat ko itana bhi akela na karo.


    Khwab bachhon ke khilono ki tarah hote hain.
    Khwab dekha na karo Khwab dikhaya na karo.


    Be Khayali mein kabhi ungliyan jal jaayengi.
    Rakh guzre hue lamhon ki kuaida na karo.


    Mom ke rishte hain garmi se pighal jaayenge.
    Dhoop ke shehr mein Wafa ki tamnna na karo
     
  2. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    Bohat Khoob
     
  3. Bohat umda sharing
     

  4. BOHAT KHOOB
    THANKS FOR NICE
    SHARING
    [​IMG]
     
  5. *MS*

    *MS* Well Wishir

    نائس شیئرنگ
    شیئرکرنےکاشکریہ
    مزید شیئرنگ کا انتظار رہے گا​
     

Share This Page