1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

کم شوقِ تماشا نہ ہوا

Discussion in 'Funny Poetry' started by PRINCE SHAAN, May 5, 2013.



  1. کم شوقِ تماشا نہ ہوا


    اس کے تڑپانے سے کم شوقِ تماشا نہ ہوا
    غیر کا ہو بھی چکا اور ہمارا نہ ہوا

    تھی خبر گرم کہ اپنے تو اُڑیں گے پرزے
    دیکھنے آئے تھے وہ بھی پہ تماشا نہ ہوا

    قیسِ آوارہ کی مانند سہے زخم کئی
    پھر بھی کہتے ہو کہ ہم سا کوئی پیدا نہ ہوا

    ہم تری بزم سے گر یوں ہی نکالے بھی گئے
    لیکن اتنا تو ہوا، عشق کا چرچا نہ ہوا

    اُن کے دیکھے سے تو آ جاتی تھی منہ پر رونق
    کیسا بیمار ہے، اب دیکھ کے اچھا نہ ہوا

    حیف تجھ پر کہ خلیل ایسے ہی تُک بندی میں
    شاعرِ بزم ہوا، دیدۂ بینا نہ ہوا
     
  2. Ali

    Ali ITU Lover

    ﺑﮩﺖ ﭘﯿﺎﺭﯼ ﺷﺌﯿﺮﻧﮓ ﮐﯽ ﮨﮯ شان برو آپ نے
    .
    ﻣﺰﯾﺪ ﺍﭼﮭﯽ ﺍﭼﮭﯽ ﺷﺌﯿﺮﻧﮓ ﮐﺎ ﺍﻧﺘﻈﺎﺭ ﺭﮨﮯﮔﺎ شکریه
    [​IMG]
     
  3. :D
    Nice Sharing Bro.....:pagal:
     

Share This Page