1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

جشن کا دن ​

Discussion in 'Poetry' started by *Shan Jee*, Oct 27, 2015.

  1. *Shan Jee*

    *Shan Jee* Designer



    جنُوں کی یاد مناؤ کہ جشن کا دن ہے​
    صلیب و دار سجاؤ کہ جشن کا دن ہے​
    طرب کی بزم ہے بدلو دِلوں کے پیراہن​
    جگر کے چاک سِلاؤ کہ جشن کا دن ہے​
    تنک مزاج ہے ساقی نہ رنگِ مَے دیکھو​
    بھرے جو شیشہ ، چڑھاؤ کہ جشن کا دن ہے​
    تمیزِ رہبر و رہزن کرو نہ آج کے دن​
    ہر اک سے ہاتھ ملاؤ کہ جشن کا دن ہے​
    ہے انتظارِ ملامت میں ناصحوں کا ہجوم​
    نظر سنبھال کے جاؤ کہ جشن کا دن ہے​
    وہ شورشِ غمِ دل جس کی لے نہیں کوئی​
    غزل کی دُھن میں سُناؤ کہ جشن کا دن ہے​
     

Share This Page