1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

بغیر کسی صلے کی تمنا


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'Aqwaal e Zareen' started by Rania, Sep 20, 2016.

Aqwaal e Zareen"/>Sep 20, 2016"/>

Share This Page

  1. Rania
    Offline

    Rania VIP Member
    • 18/33




    ایک چھوٹے سے شهر میں ایک غریب لڑکا اپنے تعلیمی اخراجات پورے کرنے کا لیۓ گھر گھر جاکر چیزیں فروخت کرتا تھا ، ایک دن اس کی کوئی بهی چیز فروخت نهیں هوئی.
    بھوک کی وجه سے اس کی حالت خراب هو رهی تھی لیکن وه کسی سے کھانے کے لیۓ کچھ مانگنے کی همت نهیں کر پا رها تھا .
    ایک گھر پر اس نے دستک دی تو دروازه ایک نوجوان عورت نے کھولا ، اس نے لڑکے کی شکل دیکھ کر بھانپ لیا که وه بھوکا هے ، خاموشی سے بغیر کوئی سوال کیۓ لڑکے کو دودھ کا گلاس تھما دیا ، دودھ پی کر لڑکے نے اس کی قیمت دریافت کی تو عورت نے کها :
    ھمدردی اور مهربانی کی کوئی قیمت نهیں هوتی "
    لڑکا شکریه ادا کر کے چلا گیا ..
    اس بات کو ایک عرصه گزر گیا ..
    وه عورت ایک شدید قسم کی بیماری میں مبتلا هوگئی ، اس کی بیماری کسی کی سمجھ میں نهیں آرهی تھی ،
    شهر کے ایک بڑے ڈاکٹر سے رجوع کیا ،
    ڈاکٹر نے اسے دیکھا اور ایک نظر میں پهچان لیا ، اس نے پوری توجه سے اس کا علاج کیا ، عورت کی جان بچ گئی ..
    ڈاکٹر نے اسپتال والوں سے کھا که اس عورت کا بل اسے بھجوا دیا جاۓ ، اسپتال والوں نے بل بهجوا دیا ، ڈاکٹر نے بل کے ایک کونے په کچھ لکھا اور واپس اس عورت کو بهیج دیا .
    جب بل کا لفافه اس عورت کو ملا تو اس نے ڈرتے ڈرتے لفافه کھولا ، اس کا خیال تھا که اس بل کی ادائیگی کے لیئے اسے اپنے اثاثے فروخت کرنا هوں گے لیکن بل پر ایک جمله لکھا تھا جسے پڑھتے ہی عورت کی آنکھیں محبت اور تشکر سے نم ہو گئی، وہ جملہ تھا کہ..
    "آپ کے ایک دودھ کے گلاس کی عوض آپ کا بل ادا کر دیا گیا ہے"
    ---------------------------
    یاد رکھیں
    زندگی میں بے لوثی سے کیا گیا کوئی بھی کام کبھی رائیگاں نهیں جاتا ، جو کچھ هم کرتے هیں ، اچھا یا برا ، اس کا بدل جلد یا بدیر همیں ضرور ملتا هے ، لیکن شرط یه هے که بغیر کسی صلے کی تمنا کے کسی کی خوشی کے لیۓ ، کسی سے همدردی کے لیئے نیکی کی جاۓ..​
    ایک چھوٹے سے شهر میں ایک غریب لڑکا اپنے تعلیمی اخراجات پورے کرنے کا لیۓ گھر گھر جاکر چیزیں فروخت کرتا تھا ، ایک دن اس کی کوئی بهی چیز فروخت نهیں هوئی.
    بھوک کی وجه سے اس کی حالت خراب هو رهی تھی لیکن وه کسی سے کھانے کے لیۓ کچھ مانگنے کی همت نهیں کر پا رها تھا .
    ایک گھر پر اس نے دستک دی تو دروازه ایک نوجوان عورت نے کھولا ، اس نے لڑکے کی شکل دیکھ کر بھانپ لیا که وه بھوکا هے ، خاموشی سے بغیر کوئی سوال کیۓ لڑکے کو دودھ کا گلاس تھما دیا ، دودھ پی کر لڑکے نے اس کی قیمت دریافت کی تو عورت نے کها :
    ھمدردی اور مهربانی کی کوئی قیمت نهیں هوتی "
    لڑکا شکریه ادا کر کے چلا گیا ..
    اس بات کو ایک عرصه گزر گیا ..
    وه عورت ایک شدید قسم کی بیماری میں مبتلا هوگئی ، اس کی بیماری کسی کی سمجھ میں نهیں آرهی تھی ،
    شهر کے ایک بڑے ڈاکٹر سے رجوع کیا ،
    ڈاکٹر نے اسے دیکھا اور ایک نظر میں پهچان لیا ، اس نے پوری توجه سے اس کا علاج کیا ، عورت کی جان بچ گئی ..
    ڈاکٹر نے اسپتال والوں سے کھا که اس عورت کا بل اسے بھجوا دیا جاۓ ، اسپتال والوں نے بل بهجوا دیا ، ڈاکٹر نے بل کے ایک کونے په کچھ لکھا اور واپس اس عورت کو بهیج دیا .
    جب بل کا لفافه اس عورت کو ملا تو اس نے ڈرتے ڈرتے لفافه کھولا ، اس کا خیال تھا که اس بل کی ادائیگی کے لیئے اسے اپنے اثاثے فروخت کرنا هوں گے لیکن بل پر ایک جمله لکھا تھا جسے پڑھتے ہی عورت کی آنکھیں محبت اور تشکر سے نم ہو گئی، وہ جملہ تھا کہ..
    "آپ کے ایک دودھ کے گلاس کی عوض آپ کا بل ادا کر دیا گیا ہے"
    ---------------------------
    یاد رکھیں
    زندگی میں بے لوثی سے کیا گیا کوئی بھی کام کبھی رائیگاں نهیں جاتا ، جو کچھ هم کرتے هیں ، اچھا یا برا ، اس کا بدل جلد یا بدیر همیں ضرور ملتا هے ، لیکن شرط یه هے که بغیر کسی صلے کی تمنا کے کسی کی خوشی کے لیۓ ، کسی سے همدردی کے لیئے نیکی کی جاۓ..
     
  2. PakArt
    Online

    PakArt ITUstad dmin Staff Member
    • 83/98

  3. muzafar ali
    Offline

    muzafar ali Regular Member
    • 28/33

    boht khoob sharing
     
  4. Rania
    Offline

    Rania VIP Member
    • 18/33

    Buhat shukria
     

Share This Page