1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

ﺭُﻭﺩﺍﺩِ ﻣﺤﺒّﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ &#64400

Discussion in 'Poetry' started by Ahsaaan, Dec 7, 2015.

  1. Ahsaaan

    Ahsaaan Senior Member


    ﺭُﻭﺩﺍﺩِ ﻣﺤﺒّﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

    ﺭُﻭﺩﺍﺩِ ﻣﺤﺒّﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ
    ﺩﻭ ﺩِﻥ ﮐﯽ ﻣُﺴﺮّﺕ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

    ﺟﺐ ﺟﺎﻡ ﺩﯾﺎ ﺗﮭﺎ ﺳﺎﻗﯽ ﻧﮯ ﺟﺐ ﺩﻭﺭ ﭼﻼ ﺗﮭﺎ ﻣﺤﻔﻞ ﻣﯿﮟ
    ﺍِﮎ ﮨﻮﺵ ﮐﯽ ﺳﺎﻋﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﯿﮯ

    ﺍﺏ ﻭﻗﺖ ﮐﮯ ﻧﺎﺯﮎ ﮨﻮﻧﭩﻮﮞ ﭘﺮ ﻣﺠﺮﻭﺡ ﺗﺮﻧّﻢ ﺭﻗﺼﺎﮞ ﮨﮯ
    ﺑﯿﺪﺍﺩِ ﻣﺸﯿّﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑُﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

    ﺍﺣﺴﺎﺱ ﮐﮯ ﻣﯿﺨﺎﻧﮯ ﻣﯿﮟ ﮐﮩﺎﮞ ﺍَﺏ ﻓﮑﺮ ﻭ ﻧﻈﺮ ﮐﯽ ﻗﻨﺪﯾﻠﯿﮟ
    ﺁﻻﻡ ﮐﯽ ﺷِﺪّﺕ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

    ﮐُﭽﮫ ﺣﺎﻝ ﮐﮯ ﺍﻧﺪﮬﮯ ﺳﺎﺗﮭﯽ ﺗﮭﮯ ﮐُﭽﮫ ﻣﺎﺿﯽ ﮐﮯ ﻋﯿّﺎﺭ ﺳﺠﻦ
    ﺍﺣﺒﺎﺏ ﮐﯽ ﭼﺎﮨﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

    ﮐﺎﻧﭩﻮﮞ ﺳﮯ ﺑﮭﺮﺍ ﮨﮯ ﺩﺍﻣﻦِ ﺩِﻝ ﺷﺒﻨﻢ ﺳﮯ ﺳُﻠﮕﺘﯽ ﮨﯿﮟ ﭘﻠﮑﯿﮟ
    ﭘُﮭﻮﻟﻮﮞ ﮐﯽ ﺳﺨﺎﻭﺕ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

    ﺍﺏ ﺍﭘﻨﯽ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﺑﮭﯽ ﺳﺎﻏﺮ ﺑﮯ ﺭﺑﻂ ﮐﮩﺎﻧﯽ ﻟﮕﺘﯽ ﮨﮯ
    ﺩُﻧﯿﺎ ﮐﯽ ﮐﯽ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﺌﯿﮯ ﮐُﭽﮫ ﯾﺎﺩ ﺭﮨﯽ ﮐُﭽﮫ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﺌﮯ

     
  2. usama

    usama Regular Member

    Thanks for sharing..
     
  3. Ziaullah mangal

    Ziaullah mangal Well Wishir

    Brother bohat hi umdah sharing hai.
     

Share This Page