1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

جنت کا سودا بن دیکھے بہت سستا ہے

Discussion in 'General Topics Of Islam' started by IQBAL HASSAN, Jan 12, 2016.

  1. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Super Moderators

    جنت کا سودا بن دیکھے بہت سستا ہے


    خلیفہ ہارون الرشید اپنی بیگم زبیدہ خاتون کے ہمراہ دریا کنارے ٹہل رہے تھے کہ ان کی ملاقات ایک معروف بزرگ بہلول سے ہو گئی.. بہلول ریت پر گھر بنا رہے تھے.. انہوں نے خلیفہ سے کہا.. "یہ گھر ایک دینار میں خرید لو.. میں دعا کروں گا کہ اللہ تعالیٰ تمھیں جنت میں ایک گھر عطا کردے.."
    خلیفہ نے اسے دیوانے کی بڑ سمجھا اور آگے بڑھ گئے.. البتہ ملکہ نے انھیں ایک دینار دے کر کہا کہ میرے لیے دعا کیجئے گا.. رات کو خلیفہ نے خواب میں دیکھا کہ جنت میں ان کی بیگم کا محل بنادیا گیا ہے..
    اگلے دن خلیفہ نے بہلول کو وہی کچھ کرتے ہوئے دیکھا تو ان سے کہا کہ میں بھی جنت میں محل خریدنا چاہتا ہوں.. بہلول نے جواب دیا.. "آج اس محل کی قیمت پوری دنیا کی بادشاہی ہے.."
    خلیفہ نے کہا.. "یہ قیمت میں تو کیا کوئی بھی نہیں دے سکتا مگر کل سے آج تک تم نے اس گھر کی قیمت اتنی کیوں بڑ ھادی.."
    بہلول نے جواب دیا.. "جنت کا سودا بن دیکھے بہت سستا ہے مگر دیکھنے کے بعد ساری دنیا کی بادشاہت بھی اس کی قیمت نہیں ہوسکتی.."

    یہ ظاہر ہے کہ ایک حکایت ہے جس کی صحیح یا غلط ہونے کی بحث غیر متعلقہ ہے لیکن جو بات اس میں بیان ہوئی ہے وہ ایک حقیقت ہے..
    آخرت کی آنے والی دنیا کی ہر حقیقت اتنی غیر معمولی ہے کہ اس کے سامنے ساری دنیا کی کوئی حیثیت نہیں ہے..
    سچ یہ ہے کہ آخرت کا ہر سودا ایسا ہے کہ انسان اس کے لیے سب کچھ دے ڈالے مگر غیب کے پردے کی بنا پر یہ سودا بہت سستا ہے.. کل قیامت کے دن انسان ہر قیمت دے کر یہ سودا کرنے کے لیے تیار ہوجائے گا مگر اس روز کسی قیمت پر یہ سودا نہیں کیا جائے گا..!
    ❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀

    [​IMG]
     

Share This Page