1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Aks Khushbu hun Bikharnay

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by IQBAL HASSAN, Jan 12, 2016.

  1. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Super Moderators



    Aks Khushbu hun Bikharnay Se na Rokay Koi
    Aur Bikhar Jaun to na mujh ko sametay koi

    Kanp uthti hun me ye soch k tanhai me
    Mere Chehre pe tera naam na parh le koi

    Jis tarha khawab ho gaye mere reza reza
    Is tarha se na kbhi tut kay bikhray koi

    Me to Is Din se Harasan Hun K Jab Hukam Milay
    Khushak Phulon Ko Kitabon me Na Rakhay Koi

    Ab To Is Rah Se Wo Shakhas Guzarta Bi Nahi
    Ab Kis Umeed Pe Darwazay Se Jhankay Koi

    Koi Ahat Koi Awaz Koi Chap Nahi
    Dil Ki Galyan Bohat Sunsan Hain Aye Koi

    [​IMG]
     
  2. بھت عمدہ
    بہائی مزید پوسٹینگ کو جاری
    رکھیں
    ویسے شیئرینگ بھت عمدہ ہوتی ہے

    ماشاء اللہ بھائی ماشاء اللہ​
     

Share This Page