1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

اوجھل سہی نگاہ سے ڈوبا نہیں ہوں میں

Discussion in 'Amjad Islam Amjad' started by nizamuddin, Jan 20, 2016.

  1. nizamuddin

    nizamuddin Regular Member

    اوجھل سہی نگاہ سے ڈوبا نہیں ہوں میں
    اے رات ہوشیار کہ ہارا نہیں ہوں میں
    درپیش صبح و شام یہی کشمکش ہے اب
    اُس کا بنوں میں کیسے کہ اپنا نہیں ہوں میں
    مجھ کو فرشتہ ہونے کا دعویٰ نہیں مگر
    جتنا برا سمجھتے ہو اتنا نہیں ہوں میں
    اس طرح پھیر پھیر کے باتیں نہ کیجئے
    لہجے کا رخ سمجھتا ہوں بچہ نہیں ہوں میں
    ممکن نہیں ہے مجھ سے یہ طرزِ منافقت
    دنیا تیرے مزاج کا بندہ نہیں ہوں میں
    امجد تھی بھیڑ ایسی کہ چلتے چلے گئے
    گرنے کا ایسا خوف تھا ٹھہرا نہیں ہوں میں
    (امجد اسلام امجد)


    [​IMG]
     
  2. boht khoooooooob
     
  3. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Super Moderators


    اوجھل سہی نگاہ سے ڈوبا نہیں ہوں میں
    اے رات ہوشیار کہ ہارا نہیں ہوں میں
    درپیش صبح و شام یہی کشمکش ہے اب
    اُس کا بنوں میں کیسے کہ اپنا نہیں ہوں میں

    ****************------------------------------------
    بہت ھی عمدہ شیرینگ ھے ۔
    اپ کابہت شکریہ۔ نوازش ۔

    [​IMG]
     

Share This Page