1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن

Discussion in 'Amjad Islam Amjad' started by nizamuddin, Jan 20, 2016.

  1. nizamuddin

    nizamuddin Regular Member

    چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن
    کیا روز گرجتے ہو، برس جاؤ کسی دن
    رازوں کی طرح اترو میرے دل میں کسی شب
    دستک پہ میرے ہاتھ کی کھل جاؤ کسی دن
    پیڑوں کی طرح حسن کی بارش میں نہالوں
    بادل کی طرح جھوم کے گھر آؤ کسی دن
    خوشبو کی طرح گزرو میرے دل کی گلی سے
    پھولوں کی طرح مجھ پہ بکھر جاؤ کسی دن
    پھر ہاتھ کو خیرات ملے بندِ قبا کی
    پھر لطف شب وصل کو دہراؤ کسی دن
    گزریں جو میرے گھر سے تو رک جائیں ستارے
    اس طرح میری رات کو چمکاؤ کسی دن
    میں اپنی ہر اک سانس اسی رات کو دے دوں
    سر رکھ کے میرے سینے پہ سوجاؤ کسی دن
    (امجد اسلام امجد)

    [​IMG]
     
  2. boht khoooooooob
     
  3. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Management




    گزریں جو میرے گھر سے تو رک جائیں ستارے
    اس طرح میری رات کو چمکاؤ کسی دن
    میں اپنی ہر اک سانس اسی رات کو دے دوں
    سر رکھ کے میرے سینے پہ سوجاؤ کسی دن
    ❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀
    بہت ہی زبردست
    بہت اچھا لگا اپ کا تھریڈ پڑھ کر
    اپ کابے حد شکریہ
    ❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀❀
     

Share This Page