1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

سب قتل ھو کے تیرے مقابل سے آئے ھیں

Discussion in 'Faiz Ahmed Faiz' started by IQBAL HASSAN, Jan 21, 2016.

  1. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Management

    سب قتل ھو کے تیرے مقابل سے آئے ھیں

    ھم لوگ سرخرو ھیں کہ منزل سے آئے ھیں

    شمع نظر، خیال کے انجم ، جگر کے داغ

    جتنے چراغ ھیں تری محفل سے آئے ھیں

    اٹھ کر تو آگئے ھیں تری بزم سے مگر

    کچھ دل ھی جانتا ھے کہ کس دل سے آئے ھیں

    ھر اک قدم اجل تھا ھر اک گام زندگی

    ھم گھوم پھر کے کوچہ قاتل سے آئے ھیں

    بادِ خزاں کا شکر کرو فیض جسکے ھاتھ

    نامے کسی بہار شمائل کے آئے ھیں


    [​IMG]
     
  2. Ab Ghafar Jamari

    Ab Ghafar Jamari Senior Member

    واہ ڑے واہ کیا بات ہے
     
  3. nizamuddin

    nizamuddin Well Wishir

    بہت خوب ۔۔۔۔۔ زبردست۔۔۔۔ واہ
    کیا کہنے جناب ۔۔۔۔ بہت عمدہ
     
  4. Aqibimtiaz786

    Aqibimtiaz786 mr.anjaan

    Bht Khoooob Share Krne Ka Shukriya.........
     

Share This Page