1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice

حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اولاد &am

Discussion in 'General Topics Of Islam' started by Azeem007, Feb 2, 2016.

Share This Page

  1. Azeem007
    Offline

    Azeem007 Mobile Expert
    • 6/8

    حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اولاد مبارک

    حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اولاد مبارک کی معروف و مشہور تعداد چھ ہے لیکن بعض مورخین نے سات بیان کی ہے ۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی چار صاحبزادیاں تھیں جن کے بارے میں کوئی اختلاف نہں۔ تاہم ۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے صاحبزادوں کے بارے میں اختلاف ہے ۔ لیکن دو صاحبزادے حضرت قاسم اور حضرت ابراہیم کے بارے میں بھی کوئی اختلاف نہیں ۔ حضرات ابراہیم کے علاوہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی باقی اولاد حضرت خدیجہ رضی اللہ وعنہا کے بطن سے پیدا ہوئی ۔
    صاحبزادے :

    ۔ حضرت قاسم رضی اللہ عنہ :
    ام لمومنین حضرت خدیجہ رضی اللہ وعنہا کے بطن سے پہلے فرزند حضرت قاسم رضی اللہ عنہ تھے ۔ جو اعلان نبوت سے پہلے پیدا ہوئے ۔ آپ اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی کنیت ابوالقاسم انہی کی نسبت سے ہے ۔ با ختلاف روایت ستر ماہ یا دو برس کی عمر میں ان کا وصال ہوا ۔
    ۔ حضرت عبد اللہ رضی اللہ عنہ :
    ام لمومنین حضرت خدیجہ رضی اللہ وعنہا کے بطن سے دوسرے صاحبزادے حضرت عبد اللہ تھے ۔ ان کا لقب طیب و طاہر ہے ۔ اعلان نبوت سے
    پہلے پیدا ہوئے ۔اور بچپن میں انتقال کر گئے ۔
    ۔ حضرت ابرا ہیم رضی اللہ عنہ :
    حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی آخری اولاد ہے ۔ حضرت ماریہ قبطیہ کے بطن سے 8 ہجری میں پیدا ہوئے ۔ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ساتویں دن عقیقہ کیا ، آپ صلی اللہ علہ وآلہ وسلم نے بال کے برابر چاندی خیرات کی۔ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہ کی روایت کے مطابق حضرت ابراہیم رضی اللہ رنہ ستر یا اٹھارہ ماہ تک زندہ رہے ۔
    صاحبزادیاں :

    ۔ حضرت زینب رضہ اللہ عنہا :
    حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی کی صاحبزادیوں میں سب سے بڑی تھیں ۔ بعثت سے دس سال قبل جبکہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی عمر مبارک تیس سال کی تھی پیدا ہوئیں ۔ ان کی اعلان نبوت سے قبل ہی شادی ان کے خالہ زاد بھائی ابوالعاص بن ربیع عے ہوئی۔ حضرت رینب رضی اللہ عنہانے اپنی والدہ کے بعد اسلام قبول کیا ۔ حضرت زینب رضی اللہ عنہا نے 8 ہجری میں انتقال فرمایا ۔
    حضرت زینب رضی اللہ عنہا نے دو اولاد چھوڑی ۔ امامہ اور علی ۔ علی کی نسبت ایک روایت ہے کہ وہ بچپن میں انتقال کر گئے لیکن عام روایت ہے کہ وہ سن رشد کو پہنچے ۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو اپنی نواسی سے بہت محبت تھی ۔
    ۔ حضرت رقیہ رضی اللہ عنہا :
    حضور اکرم صلہ اللہ علیہ وآلہ عسلم کی دوسری صاحبزادی حضرت رقیہ رضی اللہ عنہا تھیں ۔ جو اعلان نبوت سے سات برس پہلے پیدا ہوئیں ۔ ابتدا اسلام میں ہی مشرف با سلام ہو گئیں ۔ ان کی پہلے ابو لہب کے بیٹے عتبہ سے شادی ہوئی یہ شادی قبل از نبوت ہوئی تھی ۔ جب نبی کریم صلہ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے دعوی نبوت کیا تع ابولہب نے اہنے بیٹوں سے کہا کہ اگر تم محمد ( صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ) کی بیٹیوں سے علیحدگی اختیار نہیں کرتے توتمہارے عاتھ میری تشست و بر خاست حرام ہے ، عتبہ اور عیتبہ دونوں نے باپ کے حکم کی تعمیل کی ۔
    حضرت محمد صلہ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے حضرت رقیہ رضہ اللہ عنہا کا نکاح حضرت عثمان رضی اللہ عنہ سے کر دیا ۔ ان کر ہاں لڑ کا پیدا ہوا جس کا نام عبداللہ تھا ۔ جو صرف چھ سال زندہ رہا اور 4 ہجری کو انتقال کر گیا ۔ حضرت رقیہ رضہ اللہ عنہا نے بیس سال کی عمر میں انتقال فرمایا ۔
    ۔ حضرت ام کلثوم رضی اللہ عنہا :
    حضور اکرم صلہ اللہ علیہ وآلہ وسلم کی تیسری صاحبزادی حضرت ام کلثوم رضی اللہ عنہا تھیں ۔ یہ پہلے ابو لہب کے بیٹے عیتبہ کے نکاح میں تھیں ۔
    لیکن عیتبہ نے اپنے باپ کے کہنے سے رخصتی سے پہلے ہی طلاق دے دی ۔ تو حضرت رقیہ رضی اللہ عنہا کے انتقال کے بعد ربیع الاول 3 ہجری میں حضرت ام کلثوم رضی اللہ عنہا کا نکاح حضرت عثمان رضی اللہ عنہ سے ہوا ۔ اسی لیے حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کو ؛ ذوالنورین ؛ یعنی دو نور والے کہتے ہیں
    حضرت ام کلثوم رضی اللہ عنہا کا شعبان 9 ہجری میں انتقال ہوا ۔ آپ نکاح کے بعد 6 برس تک حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کے ساتھ رہیں ان کی کوئی اولاد نہ ہوئی ۔
    ۔ حضرت فاطمہ زہرا رضی اللہ عنہا :
    یہ حضرت خدیجہ رضہ اللہ عنہا کے بطن سے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سب سے چھوٹی صاحبزادی تھیں ۔ حضور کرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ان سے بہت محبت کرتے تھے ۔ ان کا نکاح غزوہ بدر کے نعد حضرت علی شیر خدا رضی اللہ عنہ سے ہوا ۔ ان کے بچن سے حضرت حسن ، حضرت حسین ، حضرت محسن رضی اللہ عنہم اور حضرت ام کلثوم ، حضرت رقیہ ، حضرت زینب رضی اللہ عنہن پیدا ہوئیں ۔ حضرت محسن اور حضرت رقیہ کا بچپن میں انتقال ہو گیا ۔
    حضرت حسن رضی اللہ عنہ اور حسین رضی اللہ عنہ کے نتعلق حضور اکرم صلہ اللہ علیہ وآلہ وسلم نی ارشاد فرمایا ، یہ دونوں جنت ک نوجوانوں کے سردار ہوں گے , ] کحضرت فاطمہ رضہ اللہ عنہا کا ینتوال حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے وصال کے چھ ماہ بعدرمضان 11 ہجری میں 24 سال کی عمر میں ہوا۔
    سیرت حبیب کبریا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ، جلد دوئم ، صفحہ نمبر 263، باب 29
     
  2. IQBAL HASSAN
    Offline

    IQBAL HASSAN Designer
    • 83/98


    ماشااللہ
    جزاک اللہ خیر
    اچھی بات دوسروں تک پہنچانا بھی نیکی ہے

     
  3. Ab Ghafar Jamari
    Offline

    Ab Ghafar Jamari Champ
    • 18/8

  4. naponnamja
    Offline

    naponnamja Superior Member
    • 18/33

Share This Page