1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Aqal Wa Dil

Discussion in 'Baat Cheet' started by ғσяυм gυяυ, May 31, 2013.

  1. عقل و دل

    عقل نے ايک دن يہ دل سے کہا
    بھولے بھٹکے کی رہنما ہوں ميں
    ہوں زميں پر ، گزر فلک پہ مرا
    ديکھ تو کس قدر رسا ہوں ميں
    کام دنيا ميں رہبری ہے مرا
    مثل خضر خجستہ پا ہوں ميں
    ہوں مفسر کتاب ہستی کی
    مظہر شان کبريا ہوں ميں
    بوند اک خون کی ہے تو ليکن
    غيرت لعل بے بہا ہوں ميں
    دل نے سن کر کہا يہ سب سچ ہے
    پر مجھے بھی تو ديکھ ، کيا ہوں ميں

    راز ہستی کو تو سمجھتی ہے
    اور آنکھوں سے ديکھتا ہوں ميں

    ہے تجھے واسطہ مظاہر سے
    اور باطن سے آشنا ہوں ميں
    علم تجھ سے تو معرفت مجھ سے
    تو خدا جو ، خدا نما ہوں ميں
    علم کي انتہا ہے بے تابی
    اس مرض کی مگر دوا ہوں ميں
    شمع تو محفل صداقت کی
    حسن کی بزم کا ديا ہوں ميں
    تو زمان و مکاں سے رشتہ بپا
    طائر سدرہ آشنا ہوں ميںکس بلندی پہ ہے مقام مرا
    عرش رب جليل کا ہوں ميں
     
  2. Net KiNG

    Net KiNG VIP Member

    Thanks For Sharing
     
  3. Hello guest, Thank you for Register or you log to see the links!

    Thanks For Sharing
    Click to expand...
    Shukriya Visit Karnay Aur Comments Denay K Liye ...
     

Share This Page