1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

چند روز اور میری جان

Discussion in 'Faiz Ahmed Faiz' started by nizamuddin, Feb 13, 2016.

  1. nizamuddin

    nizamuddin Well Wishir

    نظم


    چند روز اور میری جان
    چند روز اور، میری جان، فقط چند ہی روز
    ظلم کی چھاؤں میں دم لینے پہ مجبور ہیں ہم
    اور کچھ دیر ستم سہہ لیں، تڑپ لیں، رو لیں
    اپنے اجداد کی میراث ہے، معذور ہیں ہم
    جسم پر قید ہے، جذبات پہ زنجیریں ہیں
    فکر محبوس ہے، گفتار پہ تعزیریں ہیں
    اپنی ہمت ہے کہ ہم پھر بھی جئے جاتے ہیں
    زندگی کیا کسی مفلس کی قبا ہے جس میں
    ہر گھڑی درد کے پیوند لگے جاتے ہیں
    لیکن اب ظلم کی معیاد کے دن تھوڑے ہیں
    اک ذرا صبر کہ فریاد کے دن تھوڑے ہیں
    عرصہِ دہر کی جھلسی ہوئی ویرانی میں
    ہم کو رہنا ہے پر یوں ہی تو نہیں رہنا
    اجنبی ہاتھوں کا بے نام گراں بار ستم
    آج سہنا ہے، ہمیشہ تو نہیں سہنا ہے
    یہ تیرے حسن سے لپٹی ہوئی عالم کی گرد
    اپنی دو روزہ جوانی کی شکستوں کا شمار
    چاندنی راتوں کا بیکار دہکتا ہوا درد
    دل کی بے سود تڑپ، جسم کی مایوس پکار
    چند روز اور، میری جان! فقط چند ہی روز....
    (فیض احمد فیض)
     
  2. BlackSoul

    BlackSoul Guest

  3. Ab Ghafar Jamari

    Ab Ghafar Jamari Senior Member

    nice post brooooooo
     
  4. Aqibimtiaz786

    Aqibimtiaz786 mr.anjaan

    Nht Khoooob Share Krne Ka Shukriya.........
     
  5. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Management

Share This Page