نہ آیا نامہ بر اب تک،

Discussion in 'Urdu Shair or Qita' started by PRINCE SHAAN, Feb 6, 2013.

  1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  1. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest


    نہ آیا نامہ بر اب تک، گیا تھا کہہ کے اب آیا
    الٰہی کیا ستم ٹوٹا، خدایا کیا غضب آیا

    رہا مقتل میں بھی محروم، آبِ تیغِ قاتل سے
    یہ ناکامی کہ میں دریا پہ جا کر تشنہ لب آیا
     
  2. INNOCENT BOY
    Offline

    INNOCENT BOY Newbi
    • 16/16

    Bahut khoob my dear
     
  3. Zulfiqar Ali
    Online

    Zulfiqar Ali Guest

    ;) ;) ;) ;) ;)
    Buhat Achay
    Nice Sharing....​
     

Share This Page