1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

تم نے مجھ کو لکھا ہے، میرے خط جلا دیجے

Discussion in 'Urdu Shair or Qita' started by Admin, Jun 22, 2016.

  1. Admin

    Admin Cruise Member Staff Member


    تم نے مجھ کو لکھا ہے، میرے خط جلا دیجے
    مجھ کو فکر رہتی ہے __ آپ انہیں گنوا دیجے
    آپ کا کوئی ساتھی ___ دیکھ لے تو کیا ہو گا
    دیکھیے میں کہتی ہوں ____ یہ بہت بُرا ہو گا
    میں بھی کچھ کہوں تم سے اے مری فروزینہ
    میں تمہارے ہر خط کو لوحِ دل سمجھتا ہوں
    لوحِ دل جلا دوں کیا
    سطر سطر ہے ان کی، کہکشاں خیالوں کی
    کہکشاں لُٹا دوں کیا
    جو بھی حرف ہے ان کا ، نقشِ جانِ شیریں ہے
    نقشِ جاں مٹا دوں کیا
    ان کا جو بھی نقطہ ہے، ہے سوادِ بینائی
    میں انہیں گنوا دوں کیا
    مجھ کو ایسے خط لکھ کر اپنی سوچ میں شاید
    جرم کر گئی ہو تم
    اور خیال آنے پر اس سے ڈر گئی ہو تم
    جُرم کے تصور میں گر یہ خط لکھے تم نے
    پھر تو میری رائے میں جُرم ہی کئے تم نے
    جُرم کیوں کیے ___ تم نے
    خط ہی کیوں لکھے تم نے........!
     
  2. BlackSoul

    BlackSoul Guest

    [​IMG]
    [​IMG]
    آپکی مزید پوسٹ کا انتظا ر رہے گا۔
     

Share This Page