1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

وہ جب یاد آئے بہت یاد آۓ غم زندگی کے اندھیرے &

Discussion in 'Urdu Shair or Qita' started by Admin, Jun 27, 2016.

  1. Admin

    Admin Cruise Member Staff Member

    وہ جب یاد آئے بہت یاد آۓ
    غم زندگی کے اندھیرے میں ھم نے
    چراغ محبت جلائے بجھاۓ

    آھٹ جاگ اٹھی راستے ھنس دئیے
    تھام کر دل اٹھے ھم کسی کے لۓ
    کئ بار ایسا بھی دھوکا ھوا ھے
    چلے آ رھے ھیں وہ نظریں جھکاۓ

    وہ جب یاد آئے بہت یاد آۓ
    غم زندگی کے اندھیرے میں ھم نے
    چراغ محبت جلاے بجھاۓ

    دل سلگنے لگا اشک بہنے لگے
    جانے کیا کیا ھمیں لو گ کہنے لگۓ
    مگر روتے روتے ھنسی آگئ ھے
    خیالوں میں آ کے وہ جب مسکراۓ
    وہ جب یاد آئے بہت یاد آۓ

    وہ جدا کیا ھوۓ زندگی کھو گئ
    شمع جلتی رھی روشنی کھو گئ
    بہت کو ششیں کی مگر دل نہ بہلا
    کئ ساز چھیڑےکئ گیت گاۓ

    وہ جب یاد آئے بہت یاد آۓ

    اسد بھوپالی
     

Share This Page