1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

غصہ پر کس طرح قابو پایا جائے ؟

Discussion in 'General Topics Of Islam' started by IQBAL HASSAN, Nov 28, 2016.

  1. IQBAL HASSAN

    IQBAL HASSAN Super Moderators

    [​IMG]
    غصہ پر کس طرح قابو پایا جائے ؟


    غصہ پی جانا اور عفو و درگزر کرنا متقی و پرہیزگار لوگوں کی علامت قراردی گئی ہے ۔ اللہ تعالیٰ ارشاد فرماتا ہے
    ’’ الذین ینفقون فی السرآء والضرآء والکاظمین الغیظ والعافین عن الناس ( سورۃ آل عمران آیت نمبر 134 ) متقی وہ لوگ ہیں جو خوشحالی و تنگدستی میں خرچ کرتے ہیں غصہ کو پی جاتے ہیں اور لوگوں کے ساتھ عفو و درگذر سے کام لیتے ہیں ( آل عمران آیت 134) دوران گفتگو غصہ آنے کے باوجود صبر کرنا اعلی ظرفی کی دلیل ہے ۔ اور فضیلت والا عمل ہے ۔ زجاجۃ المصابیح ج 4 ص 126 میں حدیث شریف ہے
    ’’ عن ابن عمر قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ما تجرع عبد افضل عند اللہ عز و جل من جرعۃ غیظ یکظمھا ابتغاء وجہ اللہ تعالیٰ راواہ احمد ‘‘ ترجمہ : حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا کوئی بندہ ایسا گھونٹ نہیں پیا جو اللہ بزرگ و برتر کے پاس غصہ کے اس گھونٹ سے زیادہ فضیلت والا ہو جس کو وہ اللہ تعالی کی خوشنودی چاہتے ہوئے پی جاتا ہے ۔ جب آپ غصہ سے دو چار ہوں تو وضو کرلیں کیونکہ غصہ شیطان کی جانب سے ہوتا ہے ۔ سنن ابوداو ۔ ۔ ۔ میں حدیث پاک ہے ’’ عن عطیۃ بن عروۃ السعدی قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ان الغضب من الشیطان و ان الشیطان خلق من النار و انما تطفأ النار بالماء فاذا غضب احدکم فلیوضأ ‘‘ حضرت عطیۃ بن عروہ سعدی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے انھوں نے فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا غصہ شیطان کی طرف سے ہے اور شیطان آگ سے پیدا کیاگیا ہے اور آگ کو پانی سے بجھایا جاتا ہے پس جب تم میں سے کوئی غصہ میں آجائے تو چاہئے کہ وہ وضو کرے ۔ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے غصہ کو دور کرنے کیلئے ایک اور طریقہ تجویز فرمایا ہے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد پاک ہے جب تم میں سے کسی کو غصہ آئے اور وہ کھڑا ہوا ہو تو چاہئے کہ وہ بیٹھ جائے پس اگر اس سے غصہ ختم ہوجائے تو ٹھیک ہے ورنہ چاہئے کہ وہ لیٹ جائے ۔ ’’ عن ابی ذر ان رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم قال اذا غضب احدکم وھو قائم فلیجلس فان ذھب عندالغضب والا فلیضطجع ( سنن ابوداود )
    واللہ اعلم بالصواب–
    سیدضیاءالدین عفی عنہ،​


    [​IMG]
     
  2. muzafar ali

    muzafar ali Legend

    Jazak Allah
     
  3. Ghulam Rasool

    Ghulam Rasool Super Moderators

    very nice sharing dear ..................................
     
  4. Javed Iqbal

    Javed Iqbal New Member

Share This Page