1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Ye Kab Kaha Tha Nazaaron Se Khauf Aata Hai

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by Mohammad Sajjad, Nov 28, 2013.

  1. Ye Kab Kaha Tha Nazaaron Se Khauf Aata Hai ?
    Mujhe Tou Chaand Sitaaron Se Khauf Aata Hai,​
    Main Dushmanon K Kisi Waar Se Nahi Darta,
    Mujhe To Apne Hi Yaaron Se Khauf Aata Hai,​
    Khiza Ka Jabar Tou Seene Pay Rok Lete Hain,
    Hamein Udaas Bahaaron Se Khauf Aata Hai,​
    Mile Hain Dosto Besaakhiyon Se Gham Itne,
    Mere Badan Ko Sahaaron Se Khauf Aata Hai….
    Main Iltifaat Ki Khandaq Se Door Rehta Hun,
    Ta’alluqaat K Gaaron Se Khauf Aata Hai.​
     

Share This Page