1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice
  3. Dismiss Notice

امام ابوحنیفہ رحمتہ اللہ علیہ


آئی ٹی استاد کی ںئی ایپ ڈاونلوڈ کریں اور آئی ٹی استاد ٹیلی نار اور ذونگ نیٹ ورک پر فری استمال کریں

itustad

Discussion in 'History aur Waqiat' started by PRINCE SHAAN, Dec 21, 2013.

History aur Waqiat"/>Dec 21, 2013"/>

Share This Page

  1. PRINCE SHAAN
    Online

    PRINCE SHAAN Guest


    امام ابوحنیفہ رحمتہ اللہ علیہ

    دہریوں کی ایک جماعت نے امام ابوحنیفہ رحمتہ اللہ علیہ پرحملہ کردیا اور آپ کو قتل کرنا چاہا۔ آپ نے فرمایا کہ پہلے اس مسئلہ میں مجھ سے بحث کرلو، اسکے بعد تمہیں اختیارہے، انہوں نے اس بات کو منظورکرلیا۔چنانچہ مناظرے کی تاریخ اور وقت طے ہوگیا۔مگر ہوا یوں کہ آپ مناظرے میں دیرسے پہنچے۔ انہوں نے اس پربڑا شورغوغا کیا۔
    آپ نے فرمایا کہ پہلے میرے بات سن لو، شاید آپ مجھے تاخیر میں معذور پائیں۔
    انہوں نے کہا اچھا ٹھیک ہے بتائیے۔
    آپ نے فرمایا کہ آج تو عجیب وغریب صورت دیکھنے میں آئی۔جب میں دریا کے کنارے پہنچا تو وہاں دور تک کشتی کا نام ونشان نہ تھا۔حیران تھا کہ کس طرح دریاعبورکروں گا۔ اس اثنا میں کیا دیکھتا ہوں کہ ایک درخت خود کٹ گیا اور اس کے تختے بن گئے، پھر بغیر کسی کاریگر اور بغیر کیلوں کے ان تختوں نے جڑنا شروع کیا یہاں تک کہ کشتی تیار ہوگئی پھر وہ بغیر ملاح کے پانی کے دوش پراٹھکیلیاں کرتی میرے پاس آگئی۔ میں سوار ہوگیا، ہوا چلنے لگی یہاں تک کہ ساحل پر آلگی۔
    دہریوں نے یہ سناتو آسمان سر پر اٹھا لیا اور کہنے لگے کہ بھلا ایسا بھی ممکن ہے کہ بغیر کاٹنے کے درخت کٹ جائے اورکشتی تیار ہوجائے اور بغیر ملاح کے کشتی چلنے لگے۔
    امام صاحب نے فرمایا بدبختو ! اگر ایک درخت بغیر کاٹنے والے کے نہیں کٹ سکتا، تختے بغیرجوڑنے والے کے نہیں چڑسکتے۔
    ایک کشتی تیار ہو کر بھی بغیرملاح کے نہیں چل سکتی تو کائنات کا یہ سارا نظام یہ شجروحجر، یہ نہریں اور دریا، یہ شمس وقمر، یہ گل وگلزار، یہ حیوان اور انسان یہ ستاروں کے جھرمٹ اورکہکشاں یہ سب کچھ کیا خود از خود وجود میں آگیا اتنا بڑا کارخانہ کیاخود بخود چل رہا ہے، اسے کوئی چلانے والانہیں۔ ان دہریوں کے سمجھ میں بات آگئی اور انہوں نے تائب ہو کر اسلام قبول کرلیا۔

    (حیات امام ابوحنیفہ:ص136۔اہل الثناوالمجد:ص534)
     
  2. IQBAL
    Offline

    IQBAL Regular Member
    • 36/49

  3. Net KiNG
    Offline

    Net KiNG VIP Member
    • 38/49

    Jazak Allah Khair
     

Share This Page