1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

ٹیسٹ فنڈ سے جنوبی افریقہ کا پتا ہی صاف کردی

Discussion in 'Sports' started by UmerAmer, Jan 21, 2014.

  1. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member


    دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی آمدنی میں سے بھارت، انگلینڈ اور آسٹریلیا کو سب سے زیادہ حصہ حاصل ہوگا، ٹیسٹ فنڈ میں سے جنوبی افریقہ کا ہی پتا صاف کردیا گیا ہے۔
    ڈرافٹ میں ریونیو کی تقسیم کے لیے بھی ایک عجیب پیمانہ مقرر کیا گیا، جس میں آئی سی سی کے ریونیو میں حصہ ڈالنا، تاریخی ممبرشپ، مینز اور ویمنز مقابلوں میں گذشتہ 20 برس کی پرفارمنس اور ڈومیسٹک ڈیولپمنٹ پرفارمنس شامل ہے، اس فارمولے کے تحت آئی سی سی کی آمدنی تقسیم ہوگی جس میں بھارت کو سب سے زیادہ حصہ ملے گا۔ موجودہ فارمولے کے تحت آئی سی سی کی آمدنی 1.5 بلین اور اس میں بی سی سی آئی کا حصہ دیگر مستقل ممبران کی طرح 4.2 فیصد یعنی 52 ملین ڈالر ہے لیکن نئے فارمولے کے تحت اس کا حصہ 21 فیصد ہوجائے گا۔
    مجوزہ 3.5 بلین ڈالر آمدنی کی صورت میں بی سی سی آئی کو 766 ملین ڈالر ملیں گے، انگلینڈ اور آسٹریلیا کا حصہ بھی اسی تناسب سے ہوگا جبکہ باقی 7 مستقل ممبران کو 85 ملین ڈالر ملیں گے۔ ریونیو کی تقسیم میں ایک ٹیسٹ فنڈ قائم کرنے کی تجویز بھی شامل ہے جس سے بھارت، آسٹریلیااور انگلینڈ کے علاوہ بچنے والے باقی 7 میں سے 6 فل ممبران کو مدد فراہم کی جائے گی، ان میں پاکستان، بنگلہ دیش، سری لنکا، نیوزی لینڈ، زمبابوے اور ویسٹ انڈیز شامل ہیں،حیران کن طور پر جنوبی افریقہ اس میں شامل نہیں اور اس کی وجہ بھی نہیں بتائی گئی۔ آئی سی سی کو 2.5 بلین ڈالر کی آمدنی ہوئی تو یہ رقم 30 ملین ڈالر ہوگی اور اگر آمدنی 3.5 بلین رہی تو مجموعی رقم 90 ملین ڈالر ہوجائے گی۔​
     
  2. Net KiNG

    Net KiNG VIP Member

Share This Page