1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Jamaa tum ho nahi sakte, Mujhe manfi se nafrat hai..

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by Mohammad Sajjad, Jan 21, 2014.

  1. Jamaa tum ho nahi sakte,
    Mujhe manfi se nafrat hai,

    Tumhein takseem karta hon,
    To haasil kuch nahi aata,

    Koi qaaida, koi kuliyaa,
    Na laagu tujh pe ho paaye,

    Zarab tujh ko agar doon to ,
    Hisabon mein khallal aaye,

    Ikaayi ko, dahaayi par,
    Mein doon nisbat to kaise doon?

    Na qaalib ki tarha tum ho,
    Na al-jabra se lagte ho,

    Umer ye katt gayi meri,
    Tujhe humdam samjhne mein,

    Jo hall tera agar nikle,
    To sab kuch hi ulajh jaye,

    Sifar thi ibtidaa teri,
    Sifar hi ab talak tum ho,

    Sifar zarb-e-sifar ho tum,
    Na jis se kuch faraq aaye…
     
  2. Net KiNG

    Net KiNG VIP Member

    Wao Great Mathematically Poetry
    Thanks For Sharing
     
  3. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    بہت پیاری شئیرنگ کی ہے
    ہمارے ساتھ شئیر کرنے کے لئے شکریہ​
     
  4. wah bhai asy ghazal mujhy parhny me acha lagta hy nice ghazal keep it up
     

Share This Page