1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Derd Minnet kash-e-dawaa na huwaa

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by !__KuMar__!, Feb 11, 2014.

  1. !__KuMar__!

    !__KuMar__! Well Wishir

    Derd Minnet kash-e-dawaa na huwaa
    MaiN naa acHHaa huwa, Bura na huwaa

    Ham KahaaN Qismt Aazmaane JaayeN
    Tuu hi jab Khanjar aazmaa na huwaa

    Kitne ShereeN haiN tere Lab ke, RAQEEB
    GaalyaaN khaa ke bhii Be-mazaa na huwaa

    He Khabar garm un ke aane kii
    aaj hii ghar maiN boryaa na huwaa

    Jaan dii, Dii huwii, Usii kii thii
    Haq tu youN he ke, haq adaa na huwaa

    KucHH tu perhye , ke log kehte haiN
    aaj Ghalib Ghazal saraa na huwaa

    Mirza Ghalib.​
     
  2. plastic ke dil mein dard nahi otha :pagal::pagal:
    nice shring
     

Share This Page