1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

Kabhi munh chupa ke roye

Discussion in 'Roman Urdu Poetry' started by PRINCE SHAAN, Mar 7, 2013.

  1. [​IMG]

    KABHI MUNH CHUPA KE ROYE

    Kabhi thak ke so gye hum, Kabhi raat bhar na soye,
    Kabhi hans ke gham chupaya,Kabhi munh chupa ke roye.

    Meri Daastaan-e-Hasrat woh suna suna ke roye,
    Mere Aazmaanay waalay mujhay aazma ke roye.

    Shab-e-Gham ki aap beeti jo sunayi Anjuman me,
    Kai sun ke Muskuraye, Kai Muskura ke roye.

    Main hon Be-Watan Musafir,Mera naam Be-Kasi hai,
    Mera koi bhi nahi hai jo Galay laga ke roye.

    Mere paas se Guzar kar mera Haal tak na poocha,
    Main yeh kese maan jaon ke woh door ja ke roye,

     
  2. Bahut khoob...................
    Very nice sharing...................
     
  3. Nice Sharing
    ;)
     
  4. *MS*

    *MS* Well Wishir

    بہت خوب
    مزہ آ گیا​
     
  5. نمرہ

    نمرہ Management

    nice sharing
     
  6. ~Asad~

    ~Asad~ Management

    بہت عمدہ اپ کا بہت بہت شکریہ
     

Share This Page