1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔

ummat ka zawal

Discussion in 'Library' started by sweet love, May 13, 2014.

  1. sweet love

    sweet love Well Wishir


    حضرت ابو امامہ الباہلی کی ایک روایت کے مطابق،رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: یعنی اسلام کے حلقے (زنجیر) ٹوٹتے رہیں گے،ایک کے بعد دوسری کڑی- جب ایک کڑی ٹوٹے گی تو لوگ باقی مانده کڑی سے جڑ جائیں گے- پہلی کڑی جو ٹوٹے گی، وه ،الحکم، ہے اور آخری کڑی جو ٹوٹے گی،وه ،الصلاه، ہے-(مسند احمد:251/5)
    حکم (اقتدار) اور صلاه(نماز) دونوں کا ایک ڈهانچہ ہے اور ایک اس کی روح -اس حدیث میں جس چیز کے ٹوٹنے کا ذکر ہے،وه حکم اور صلاه کی اسپرٹ ہے،نہ کہ اس کا ظاہری فارم،کیونکہ کسی بهی امت میں ان چیزوں کی صرف داخلی اسپرٹ مفقود ہوتی ہے،نہ کہ اس کا ظاہری ڈهانچہ-حدیث کا مطلب یہ ہے کہ فطرت کے قانون کے مطابق،جب امت مسلمہ پر زوال آئے گا تو ایسا نہیں ہو گا کہ وه صفحہ ہستی سے مٹ جائے، بلکہ یہ ہو گا کہ بظاہر ڈهانچہ تو موجود ہو گا، مگر داخلی حقیقت مفقود ہو چکی هو گی-گویا سلام کا قشر (چهلکا) موجود هو گا،لیکن اسلام کا مغز موجود نہ ہو گا-مثلا ظاہری اعتبار سے،مسلم حکومت موجود هو گی،لیکن اقامت عدل موجود نہ ہو گا،جو کہ حکومت کا اصل مقصود ہوتا ہے-اسی طرح نماز کا ظاہری ڈهانچہ تو موجود ہو گا،لیکن نمازیوں کے اندر خشوع کی کیفیت موجود نہ ہو گی،جو کہ نماز کی اصل حقیقت ہے-اسی طرح بظاہر دین کے نام پر بہت سی سرگرمیاں جاری هوں گی،لیکن یہ سرگرمیاں قومی کلچر کی سرگرمیاں هوں گی،نہ کہ حقیقی معنوں میں دین خداوندی کی سرگرمیاں-کوئی امت کبهی ظاہری معنوں میں نہیں مٹتی-دور زوال میں جو واقعہ پیش آتا ہے،وه صرف یہ ہوتا ہے کہ معنوی اعتبار سے،امت کمزور یا بے روح ہو جائے-
    الرسالہ،جنوری 2014

     
  2. UmerAmer

    UmerAmer VIP Member

    Very Nice
    Keep it up
     
  3. sweet love

    sweet love Well Wishir

    shukria . . . . . . . . . .
     
  4. Very nice sharing.. Thanks
     

Share This Page